بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / پاکستان اور یو ایس ایڈ کے درمیان کرم تنگی ڈیم پر مالی معاونت کا معاہدہ طے پا گیا

پاکستان اور یو ایس ایڈ کے درمیان کرم تنگی ڈیم پر مالی معاونت کا معاہدہ طے پا گیا

اسلام آباد۔ پاکستان اور یو ایس ایڈ کے درمیان کرم تنگی ڈیم پر مالی معاونت کا معاہدہ طے پا گیا جس کے تحت ڈیم کی تعمیر کے لئے یو ایس ایڈ پاکستان کو ساڑھے آٹھ ارب روپے فراہم کرے گا منصوبے سے سولہ ہزار ایکڑ اراضی سیراب ہوگی جب کہ ابتدائی مرحلے میں اٹھارہ میگا واٹ بجلی بھی حاصل ہوسکے گی ۔

بدھ کے روز اسلام آباد میں اس حوالے سے منعقدہ تقریب میں معاہدے پر واپڈا اور یو ایس ایڈ کے درمیان دستخط ہوگئے ہیں معاہدے سے سستی توانائی حاصل کرنے سمیت زراعت کے شعبے میں وسیع مقدار میں اور بہتر مواقع میسر آنے میں مدد مل سکے گی ۔ وفاقی وزیر پانی و بجلی خواجہ آصف نے تقریب سے خطاب میں کرم تنگی ڈیم پر امریکی مالی معاونت کو ترقی یافتہ پاکستان کیلئے اہم سنگ میل قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ امریکی امداد سے اس منصوبے کی تکمیل سے پن بجلی کی پیداوار میں اضافے کی صورت میں سستی بجلی ملے گی اور زراعت کے شعبے میں میں وافر مواقع پیدا ہونے سمیت جنوبی وزیرستان کے عوام کا معیار زندگی بلند کرنے میں مدد ملے گی۔

خواجہ آصف نے کہاکہ حکومت پانی کے حصول کیلئے کئی منصوبوں پر بیک وقت کام کررہی ہے جن میں بھاشا ، دیامر داسو اور کرم تنگی سمیت کئی اہم منصوبے شامل ہیں جن سے عوام کا معیار زندگی بلند کرنے سمیت عسکریت پسندی کا مکمل سدباب کرنے میں مدد ملے گی چیئرمین واپڈا مزمل حسین نے اس موقع پر خطاب میں کہا کہ کرم تنگی ڈیم سے ترقی پاکستان کا مقدر بنے گی ڈیم سے سولہ ہزار ایکڑ اراضی سیراب ہوگی ۔

جب کہ پہلے مرحلے میں منصوبے سے اٹھاہ میگا واٹ بجلی بھی حاصل ہوسکے گی تقریب سے امریکی سفیر ڈیوڈ ہیل نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کی اقتصادی ترقی کے لئے توانائی انتہائی ضروری ہے اور اس کے حصول میں ہم پاکستان کی مدد کا عزم کئے ہوئے ہیں امریکی سفیر نے کہا کہ پاک امریکہ تعلقات اور تعاون کی تاریخی اہمیت سے انکار نہیں کیا جاسکتا ہے امریکی سفیر نے کہا کہ پاور سیکٹر میں امریکی معاونت سے چوبیس سو میگا واٹ سے زائد بجلی سسٹم میں آئی ہے اور توانائی بحران پر قابو پانے کیلئے حکومت پاکستان کو ہر ممکن تعاون فراہم کررہے ہیں ۔