بریکنگ نیوز
Home / بزنس / مارچ2018تک 10ہزار میگاواٹ سے زائد بجلی نظام میں شامل ہوگی، اسحاق ڈار

مارچ2018تک 10ہزار میگاواٹ سے زائد بجلی نظام میں شامل ہوگی، اسحاق ڈار

اسلام آباد ۔وفاقی وزیرخزانہ اسحاق ڈار نے کہا ہے کہ مارچ2018تک 10ہزار میگاواٹ سے زائد بجلی نظام میں شامل ہوگی،حکومت نے بڑے بحرانوں پر قابو پایا ہے،جی ڈی پی کی شرح گذشتہ8سال کی بلند ترین سطح پر ہے،پاکستان کے معاشی استحکام دنیا کے 22مالیاتی ادارے تسلیم کرچکے ہیں،معاشی استحکام کیلئے کشکول پر نہیں خود پر بھروسا کیا،وزیراعظم کا وژن صرف اپنی حکومت تک نہیں بلکہ آئندہ ادوار تک محیط ہے،ترقی کی راہ میں رکاوٹ بننے والوں کو عوام آئندہ بھی موقع نہیں دینگے۔

وہ وفاقی ایوان برائے صنعت و تجارت کے ایکسپورٹ ایوارڈز کی تقریب سے خطاب کر رہے تھے انہوں نے کہا کہ 2013میں پاکستان کو دہشتگردی ،توانائی اور معاشی بحران کا سامنا تھا،نوازشریف قوم کے ساتھ کئے گئے وعدے پورے کر رہے ہیں،2013کے انتخاب سے پہلے ملک کے دیوالیہ ہونے کی باتیں کی جارہی تھیں،مسلم لیگ ن نے ملک کو درپیش تمام چیلنجز کا سامنا کیا،حکومت نے بڑے بحرانوں پر قابو پایا،2013میں ملکی زرمبادلہ کے ذخائر خطرناک حد تک کم ہوچکے تھے۔

وزیراعظم نے اپنے تجربے کی بنیاد پر معاشی پیکج دیا،پاکستانی معیشت مثبت انداز میں چل رہی ہے،معاشی پیکج کی وجہ سے پاکستان معاشی طور پر مستحکم ہوا ہے،جی ڈی پی کی شرح گذشتہ 8سال کی بلند ترین سطح پر ہیں،اسحاق ڈار نے کہاکہ 2016کے بجٹ میں پاکستان کی تاریخ کا سب سے بڑا زرعی پیکج دیا،پاکستان کے معاشی استحکام دنیا کے 22مالیاتی ادارے تسلیم کر چکے ہیں گذشتہ15برس کے زیرالتوا،ترقیاتی کاموں کو مکمل کیا ہے،آج زرمبادلہ کے ذخائر ملک کی بلند ترین سطح پر ہیں،آج پاکستان کو سرمایہ کاری کیلئے دنیا کا دوسرا پرکشش ملک قراردیا جارہا ہے۔

پاکستان میں معاشی اعشارئیے مثبت اور لوڈشیڈنگ میں کمی ہوئی ہے،مارچ2018تک 10ہزار میگاواٹ سے زائد بجلی نظام میں شامل ہوگی انہوں نے کہا کہ آج پاکستان کی سٹاک مارکیٹ ایشیاء کی بہترین مارکیٹ قراردی جارہی ہے،وزیراعظم کا وژن صرف اپنی حکومت تک نہیں بلکہ آئندہ ادوار تک محیط ہے،وزیراعظم نے ملک سے دہشتگردی کے خاتمے کا عزم کر رکھا ہے،وزیراعظم کے جرات مندانہ فیصلوں کے ثمرات عوام تک پہنچ رہے ہیں۔

پاکستان کے معاشی استحکام کی بدولت چین نے اقتصادی راہداری منصوبہ شروع کیا،شرح نمو میں اضافہ سے بے روزگاری اور غربت میں کمی ہوئی،معاشی استحکام کیلئے کشکول پر نہیں خود پر بھروسہ کیا ،مغرب میں پاکستان کا معاشی تشخص تبدیل ہو کر مثبت ہوگیا ہے،ترقی کی راہ میں رکاوٹ بننے والوں کو عوام آئندہ بھی موقع نہیں دینگے،آج پاکستان کو سرمایہ کاری کیلئے دنیا کا دوسرا پرکشش ملک قراردیا جارہا ہے۔