بریکنگ نیوز
Home / بزنس / چینی سرمایہ کار انتطامی کنٹرول کیساتھ اکثریتی حصص خریدنے کے خواہشمند

چینی سرمایہ کار انتطامی کنٹرول کیساتھ اکثریتی حصص خریدنے کے خواہشمند

 کراچی۔ چینی سرمایہ کاروں نے پاکستان اسٹاک ایکس چینج میں 51فیصد حصص خریدنے کی اجازت طلب کرلی، بروکرز کی جانب سے چینی سرمایہ کاری کو خوش آئند قرار دیتے ہوئے اکثریتی حصص کی فروخت کے لیے آمادگی ظاہر کردی گئی ہے اور مجوزہ نیلامی میں 40 فیصد سے زائد حصص کی فروخت کیلیے بروکرز کے پاس رہ جانے والے باقی حصص کی تفصیلات بھی ایس ای سی پی کو ارسال کردی ہیں۔

اسٹاک مارکیٹ ذرائع کے مطابق 40 فیصد حصص کی نیلامی کیلیے چینی سرمایہ کاروں کی بولی میںتاخیر ہو رہی ہے جس کی وجہ چینی کنسورشیم کی جانب سے 51 فیصد حصص کی خریداری پر زور ہے، چینی سرمایہ کار اکثریتی حصص اور انتظامی کنٹرول کے خواہش مند ہیں۔ ذرائع کے مطابق ایس ای سی پی نے چینی سرمایہ کاروں کو جواب دیا ہے کہ فی الوقت 40 فیصد حصص خریدلیں اور اگلے مرحلے میں اسے 51فیصد تک بڑھا لیں تاہم چینی سرمایہ کار اسی مرحلے میں 51 فیصد حصص کی خریداری پراصرار کررہے ہیں۔

اس بارے میں معاشی تجزیہ کار مزمل اسلم نے ’’ایکسپریس‘‘ کو بتایا کہ چینی سرمایہ کار اسٹاک مارکیٹ سے متعلق چل رہے قانونی مقدمات کے حوالے سے ضمانت مانگ رہے ہیں، انھوں نے یہ نکتہ بھی پیش کیاکہ اسٹاک مارکیٹ میں حصص کی خریداری کے بعد ٹیکس وصولی سمیت کسی بھی ہرجانے کے دعوے کی مد میں ادائیگی واجب ہونے پر اس ادائیگی کا کون ذمے دار ہوگا کیونکہ یہ ادائیگی اسٹاک مارکیٹ کی انتظامیہ پر عائد ہوگی، اسی طرح ایکس چینج کے 200بروکرز میں سے بہت سے بروکرز کو قانونی چارہ جوئی کا سامنا ہے جن کا فیصلہ آنے کی صورت میں شیئر ہولڈنگ کی تبدیلی کے بعد آنے والے سرمایہ کاروں پر بھی ذمے داری عائد ہوگی۔