بریکنگ نیوز
Home / دلچسپ و عجیب / جاپان میں مریض کو گٹھڑی میں بند کرکے علاج کا عجیب طریقہ

جاپان میں مریض کو گٹھڑی میں بند کرکے علاج کا عجیب طریقہ


ٹوکیو۔ جاپان میں خراب انداز میں اٹھنے بیٹھنے سے متاثرہ جسم میں پیدا ہونے والی سختی اور تکلیف کو دور کرنے کے لیے مریضوں کو ایک بڑی چادر میں گٹھڑی کی طرح لپیٹ کر ان کا علاج کرنے کا طریقہ بہت مقبول ہورہا ہے۔جاپانی طویل اوقات تک سخت محنت کرنے میں مشہور ہیں اور اس دوران ان کی نشست و برخواست کا انداز (پوسچر) متاثر ہوتا ہے جس سے طرح طرح کی تکالیف مثلاً جوڑوں کا درد، سختی اور دیگر امراض پیدا ہوتے ہیں۔ مساج اور اعضا کو کھینچنے سے بھی فائدہ ہوتا ہے لیکن جاپانی ماہرین  نے اس کا بہتر حل تلاش کیا ہے وہ مریضوں کو ایک بڑی چادر میں باندھ کر جسم کو اسی حالت میں رکھتی ہیں جس طرح ایک بچہ ماں کے پیٹ میں سکڑ کر سویا رہتا ہے۔

اسے بالغ افراد کو لپیٹنے (اڈلٹ باڈی ریپنگ) کا نام دیا گیا ہے۔ لوگ بڑی تعداد میں اسے اپنارہے ہیں۔ اس میں ایک ایسا باریک کپڑا بدن پر لپیٹا جاتا ہے کہ مریض کو سانس لینے میں تکلیف نہ ہو اور اسے 15 سے 20 منٹ کے لیے چھوڑ دیا جاتا ہے۔ واضح رہے کہ ہمارے ملک میں بھی چھوٹے بچوں کو سکون دینے یا معمولی پیدائشی نقائص دور کرنے کے لیے انہیں اسی طرح لپیٹا جاتا ہے بس فرق یہ ہے کہ اب اسے بالغ افراد پر آزمایا جارہا ہے۔

اسے آزمانے والے خواتین و حضرات نے بہت مفید قرار دیا ہے۔ وجہ یہ ہےکہ وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ ہماری کمر اور ہڈیوں کی لچک کم ہوتی جاتی ہے اور خود کو اس طرح گھٹڑی میں باندھنے سے بدن کو نہ صرف سکون ملتا ہے بلکہ ڈھانچے پر ہونے والے اثرات بھی کم ہوجاتےہیں۔

اگرچہ اس طریقے پر تنقید اور غیرسائنسی ہونے کا الزام بھی لگایا جارہا ہے لیکن یہ سلسلہ جاری ہے اور ایک سیشن کی قیمت 3 ہزار سے ساڑھے 6 ہزار روپے ہے۔