بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / اے ٹی آر طیارے کی پرواز سے قبل بکر ے کا صدقہ ،پی آئی اے نے تشویش کااظہار

اے ٹی آر طیارے کی پرواز سے قبل بکر ے کا صدقہ ،پی آئی اے نے تشویش کااظہار


راولپنڈی۔پاکستان ایئر لائنز (پی آئی اے) نے بے نظیر بھٹو انٹر نیشنل ایئرپورٹ پر اے ٹی آر طیارے کی پرواز سے قبل بکرے کو صدقہ کیے جانے کے واقعے پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے تحقیقات کا آغاز کردیا۔ادارے کے سکیورٹی حکام نے ایئرپورٹ کے انتہائی حساس حصے میں بکرے کو ذبح کرنے کیلئے لائی گئی چھری پر تشویش کا اظہار کیا تھا۔

خیال رہے کہ 18 دسمبر کو سوشل میڈیا پر ایک خبر منظر عام پر آئی تھی کہ پی آئی اے کی اے ٹی آر 42 پرواز سے قبل ایک بکرے کو صدقہ کیا گیا ہے، جس پر بے نظیر بھٹو ایئرپورٹ کے سکیورٹی حکام بھی حیران رہ گئے کہ ایسے حساس حصے میں چھری کیسے لائی گئی جہاں کسی فرد یا ہتھیار کو لے جانے کیلئے سکیورٹی کلیئرنس کی ضرورت ہوتی ہے۔سینئر سکیورٹی عہدیدار کا کہنا تھا کہ ایئر پورٹ کے حساس حصے میں چھری اور کالے بکرے کو لائے جانے کے واقعے کی تحقیقات کا آغاز کردیا گیا ہے اور اس وقت ڈیوٹی پر موجود سکیورٹی اہلکار سے بھی تفتیش کی جائے گی۔

واضح رہے کہ اتوار کو ایک اے ٹی آر طیارے کو پرواز کی اجازت دیے جانے کے بعد اس طیارے کے مسافروں اور عملے کی زندگیوں کیلئے صدقے کے طور پر ایک بکرے کو ذبح کیا گیا تھا۔اس موقع پر پی آئی اے کی انتظامیہ نے خود کو مذکورہ معاملے سے دور رکھا اور ترجمان دانیال گیلانی کا کہنا تھا کہ یہ اقدام ایک ملازم کی جانب سے اے ٹی آر طیارے کو کلیئر کیے جانے پر کیا گیا ہے۔پی آئی اے ترجمان کا کہنا تھا کہ سول ایوی ایشن اتھارٹی کی جانب سے پی آئی اے کے آٹی آر طیاروں کے بیڑے کی جانچ کا فیصلہ کیا گیا تھا جس پر تمام 10 اے ٹی آر طیاروں کو گراؤنڈ کردیا گیا۔انھوں نے دعویٰ کیا کہ دو اے ٹی آر طیاروں کو کلیئر کیا جاچکا ہے۔