بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / اپوزیشن کا کام پار لیمنٹ میں شور مچانا نہیں ایشوز پر بات کرنا ہے ‘سردار ایاز صادق

اپوزیشن کا کام پار لیمنٹ میں شور مچانا نہیں ایشوز پر بات کرنا ہے ‘سردار ایاز صادق


لاہور۔سپیکر قومی اسمبلی سردار ایاز صادق نے کہا ہے کہ اپوزیشن کا کام پار لیمنٹ میں شور مچانا نہیں ایشوز پر بات کرنا ہے ‘ عمران خان بالغ ہے بچے نہیں انکو کوئی مشورہ نہیں دوں گا انکو زبر دستی قومی اسمبلی نہیں لاسکتا ‘پیپلزپارٹی کے مطالبات پر پار لیمنٹ میں بات ہو سکتی تو قومی اسمبلی کو فورم انکے لیے حاضرہیں حکومت اور پیپلزپارٹی میں مذاکرات ہی ہوں گے ‘ پر ویز مشرف کو فوج کو متنازعہ نہیں بنانا چاہیے انکا کوئی سیاسی مستقبل نہیں ‘میں فوج اور سپر یم کورٹ کو غیر متنازعہ دیکھ رہا ہوں سب ادارے اپنی آئینی حدود میں رہ کر کام کر رہے ہیں اور کرتیں رہیں گے ‘اگلا الیکشن کار کردگی کی بنیاد پر ہوگا اور عوام اپنے ووٹ کی طاقت سے فیصلہ کر یں گے۔

‘چوہدری نثار کا ملک میں دہشت گردی کے خاتمے میں اہم کردار ہیں وہ باکردار سیاستدان ہیں ‘جسٹس قاضی عیسیٰ کی رپورٹ او ر چوہدری نثار کا موقف مختلف ہے اب فیصلہ سپر یم کورٹ ہی ہوگا ۔گزشتہ روز یہاں کر سمس کا کیک کاٹنے کی ایک تقر یب کے بعد میڈیا سے گفتگو میں سپیکر قومی اسمبلی نے کہا کہ پر ویز مشرف اور انکی جماعت کو2013میں عوام نے ووٹ دےئے وہ سب کے سامنے ہیں میں انکو سیاست کے حوالے سے کوئی مشورہ نہیں دوں گا مگر میں سمجھتا ہوں کہ انکا پاکستان کی سیاست میں کوئی مستقبل نہیں ۔ ایک سوال کے جواب میں سپیکر قومی اسمبلی نے کہاکہ ہمیں ایک دوسرے کی عزت کر نی چاہیے اور کسی بھی سیاسی لیڈر کو ایسی بات نہیں کر نی چاہیے جس سے بعد میں کسی شر مندگی کا سامنا کر نا پڑ ے جہاں تک اپوزیشن کا تعلق ہے تو ان کاکام ہے وہ پار لیمنٹ سمیت دیگر فورمز پر ایشوز پر بات کر یں انکو پار لیمنٹ میں ایشوز پر بات کرنی چاہیے شور نہیں مچانا چاہیے اور تحر یک انصاف نے پار لیمنٹ میں آنا ہے تو قواعد کے مطابق چلیں کسی کو ایوان کے وقت کا ضیاع نہیں کر نا چاہیے ۔

صرف عوامی اور ملکی معاملات پر ہی بات کر نی چاہیے ۔ انہوں نے کہا کہ مجھے نہیں پتہ پیپلزپارٹی27دسمبرکو کیسے احتجاج کا اعلان کر نے جا رہی ہے۔ اگر ان کے مطالبات میں کسی معاملے پر پار لیمنٹ میں بات ہوسکتی ہے تواس کیلئے قومی اسمبلی حاضرہے۔ایک سوال کے جواب میں سپیکر قومی اسمبلی نے کہا کہ جسٹس قاضی عیسیٰ کی رپورٹ او ر چوہدری نثار کا موقف مختلف ہے اب فیصلہ سپر یم کورٹ ہی کاہوگا قاضی عیسیٰ کی رپورٹ کے مطابق چوہدری نثار علی خان پر کوئی دباؤ نہیں چوہدری نثارجو اندر سے و ہی باہر سے ہیں ۔وہ خود وزیر اعظم کو بھی جسٹس قاضی عیسیٰ کی رپورٹ کے بعد استعفیٰ کی پیشکش کر چکے ہیں اب رپورٹ کے بعد معاملہ سپر یم کورٹ میں چلے گا تو وہاں سپریم کورٹ چوہدری نثار علی خان یا انکے وکلاء کو بلائیں گے تو وہ ضرور جائیں گے اور وہاں جاکر اپنا موقف دیں گے معاملہ سپر یم کورٹ میں ہے۔ اس لیے اس پر مزید بات نہیں کر نی چاہیے۔