بریکنگ نیوز
Home / اداریہ / آرمی چیف کاافغان قیادت کو فون

آرمی چیف کاافغان قیادت کو فون

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے افغان صدر اشرف غنی چیف ایگزیکٹوعبداللہ عبداللہ اور افغان آرمی کے سربرا ہ کیساتھ ٹیلی فون پر رابطہ کیا ہے ‘پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کے مطابق جنرل قمر جاوید باجوہ نے افغان قیادت کو نئے سال کی مبارکباد دی اور امن کے قیام کیلئے مل کر کام کرنے کے عزم کا اعادہ کیا آرمی چیف کا کہنا ہے کہ دونوں ملکوں میں امن خطے کے بہترین مفاد میں ہے‘افغان قیادت نے جنرل قمر جاوید باجوہ کو دورہ افغانستان کی دعوت بھی دی ‘ عین اسی روز وزیراعظم نواز شریف آرمی چیف جنرل باجوہ سمیت مسلح افواج کے سربراہوں نے صدر مملکت ممنون حسین سے ملاقات کی جس میں صدر مملکت نے کہا کہ پاکستان خطے میں قیام امن کیلئے اہم کردار ادا کر رہا ہے جس کی پوری دنیا معترف ہے اس میں کوئی دوسری رائے نہیں کہ پاکستان نے بھارت کیساتھ تمام تصفیہ طلب امور بات چیت کے ذریعے نمٹانے کی کوشش کی ہے تاہم یہ بات بھی ریکارڈ کا حصہ ہے کہ بھارت نے ہمیشہ ان کوششوں کو کسی نہ کسی بہانے سبوتاژ ہی کیا ہے دوسری جانب افغانستان پر روسی یلغار سے لیکر آج تک پاکستان لاکھوں افغان مہاجرین کی میزبانی کر رہا ہے۔

جس میں بے شمار مشکلات کا سامنا بھی کرنا پڑ رہا ہے ‘ دہشتگردی کے خلاف جنگ میں پاکستان کا کردار ریکارڈ کا حصہ ہے پاکستان افغانستان میں امن کے قیام کیلئے بھی کردار ادا کرتے ہوئے مذاکراتی عمل کی میزبانی بھی کر چکا ہے وقت آ گیا ہے کہ افغان قیادت اور عالمی برادری پاکستان کے مثبت کردار اور مستقبل کیلئے خوش آئند ارادوں کا ادراک کرے افغان قیادت پاکستان کیخلاف بے بنیاد الزام تراشیوں پر مبنی بیانات کا سلسلہ بند کرے اس حقیقت کا احساس کیا جائے کہ پاکستان اورا فغانستان میں امن دونوں ملکوں کے بہترین مفاد میں ہے امن ہی کے ذریعے معیشت کا استحکام ممکن ہے جو غربت کے خاتمے اور عوام کے حالات میں بہتری کا ضامن ہے عالمی برادری کو بھی چاہئے کہ وہ اس ضمن میں اپنا کردار ادا کرتے ہوئے پاکستان کے موقف کو سپورٹ کرے اس سارے عمل میں پاکستان کی قربانیوں اور معیشت کو پہنچنے والے نقصان کو بھی مد نظر رکھنا چاہئے ۔

پانامہ کیس کیلئے نیا بنچ

جسٹس ثاقب نثار نے سپریم کورٹ کے چیف جسٹس کا عہدہ سنبھال لیا ہے اس کیساتھ ہی عدالت عظمی نے پانامہ کیس کی سماعت کیلئے نیا لارجر بنچ تشکیل دے دیا ہے ‘ چیف جسٹس نے اپنے آپ کو کیس سے الگ رکھا ہے میڈیا رپورٹس کے مطابق بنچ کی سربراہی جسٹس آصف سعید کھوسہ کریں گے کیس کی سماعت اَب 4 جنوری کو ہو گی ‘ تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان کہتے ہیں کہ انہیں سپرپم کورٹ کے بنچ کی تشکیل پر پورا اعتماد ہے اور جو بھی فیصلہ آئے گا وہ قبول کریں گے ‘ ان کا یہ بھی کہنا ہے کہ پانامہ لیکس جنوری ہی میں آ رپار ہو جائے گا‘ وطن عزیز میں پانامہ پیپرز کی رپورٹ پر کاروائی غیر معمولی تاخیر کا شکار رہی جبکہ دنیا کے متعدد ممالک میں اہم لوگ مستعفی بھی ہوئے کچھ کے خلاف کاروائی ہوئی اور قوانین پر نظر ثانی بھی ہوئی پاکستان میں یہ معاملہ انکوائری کے ٹی او آرز میں ہی الجھا جا رہا جس پر کیس عدالت عظمیٰ پہنچا اَب ہماری ذمہ دار سیاسی قیادت کو چاہئے کہ وہ عدالتی فیصلے کا انتظار کرے اور اس ضمن میں غیر ذمہ داررویوں سے گریز کیا جائے تاکہ دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی ہو سکے۔