224

نوبیل انعام کا دعویدار جعلی ڈاکٹر جیل منتقل 

چنیوٹ۔صوبہ پنجاب کے شہر چنیوٹ میں 10 نوبیل انعام حاصل کرنے اور دنیا کے سب سے بڑے سائنسدان ہونے کے دعویدار جعلی ڈاکٹر کو مقامی عدالت کے حکم پر ڈسٹرکٹ جیل جھنگ منتقل کردیا گیا جبکہ ملزم کے کلینک کو سیل کردیا گیا۔ملزم عمران احمد نے’’سر پروفیسر ڈاکٹر آر یو عمران احمد سائنسدان‘‘ کے نام سے چنیوٹ کے محلہ ساہیوالہ میں کلینک کھول رکھا تھا، جہاں وہ ہر قسم کے مرض کا علاج مبینہ طور پر صرف 10 منٹ میں کیا کرتا تھا۔

ملزم خود کو سوشل میڈیا پر دنیا کا سب سے بڑا ڈاکٹر سائنسدان اور اکیسویں صدی کا دنیا کا سب سے بڑا مسیحا (نجات دہندہ) لکھتا تھا، جس کا دعویٰ تھا کہ اس نے 10 نوبیل امن انعام اور 40 شاہ فیصل انعام حاصل کر رکھے ہیں۔ساتھ ہی وہ لوگوں کو بے وقوف بنانے کے لیے خود کو 100 سائنسی کارناموں کا موجد، 361 قوانین برائے جدید میڈیکل سائنس(میڈیکل عدلیہ)کا موجد، میڈیکل سائنس لا میکر، 1000 سائنٹیفک تھیوریر اور 700 سائنٹیفک میڈیکل اقوال کا موجد اور 10 تخلیقی و انقلابی تصانیف کا مصنف بتاتا تھا۔ملزم اپنی علمیت کی دھاک بٹھانے کے لیے مختلف ڈگریاں ظاہر کرتا تھا اور ساڑھے 5 ہزار روپے ایڈوانس فیس لے کر 10 روز میں پیچیدہ اور لاعلاج بیماریوں کا علاج کرنے کا دعویٰ کرتا تھا۔پولیس نے جعلی ڈاکٹر کے خلاف گذشتہ روز مقدمہ درج کرکے اسے گرفتار کیا تھا۔