861

دنیا کا بڑا اور طاقتور ترین راکٹ کار لیکر خلا میں روانہ

امریکی ٹیکنالوجی کمپنی ٹیسلا اینڈ اسپیس کی جانب سے دنیا کے سب سے بڑے اور طاقتور ترین خلائی راکٹ ’فیلکن ہیوی‘ کو تحقیقات کے لیے خلا پر بھیج دیا گیا۔

یہ پہلا موقع ہے کہ کسی خلائی راکٹ میں زمین سے کسی دوسرے سیارے کی جانب سے کار بھی بھیجی گئی ہے۔

اس راکٹ میں ٹیسلا اینڈ اسپیس کمپنی کے سربراہ ایلون مسک کی سرخ رنگ کی کار ’ریڈ سٹر‘ کو بھی خلا میں بھیجا گیا ہے۔

کمپنی کے سربراہ نے خلائی راکٹ کے خلا میں پہنچنے کے حوالے سے کہا ہے کہ ’فیلکن ہیوی‘ کے کامیاب تجربے کے امکانات نصف ہیں، جب کہ اس کی ناکامی کو بھی نظر انداز نہیں کیا جاسکتا۔

خیال رہے کہ ٹیسلا اینڈ اسپیس نجی ٹیکنالوجی کمپنی ہے، جو 2024 تک مریخ پر انسانوں کو لے جانے کا اعلان کر چکی ہے، یہی کمپنی مریخ پر انسانوں کا شہر آباد کرنے کا بھی اعلان کر چکی ہے۔

ٹیسلا اینڈ اسپیس کمپنی مریخ پر انسانوں کے شہر کو آباد کرنے کے لیے خصوصی راکٹ تیار کرنے میں مصروف ہے، فیلکن ہیوی بھی اسی منصوبے کا حصہ ہے، جو زمین سے مریخ کی جانب سے نہ صرف انسان بلکہ ضرورت کی دیگر بھاری چیزیں بھی لے جانے کی صلاحیت رکھتا ہے۔

اس راکٹ کا ابتدائی تجربہ دسمبر 2017 میں کیا گیا تھا، اس راکٹ کو ’فیلکن ہیوی 9‘ بھی کہا جاتا ہے، تاہم اب خلا میں بھیجے گئے راکٹ کو اپ گریڈ کرکے اسے ’فیلکن ہیوی 64‘ کا نام بھی دیا گیا ہے۔

 دنیا کے سب سے بڑے اور طاقتور راکٹ کو امریکی ریاست فلوریڈا کے کینیڈی اسپیس سینٹر کے اس مقام سے خلا میں بھیجا گیا، جہاں سے نصف صدی قبل پہلی بار کسی انسان کو چاند پر بھیجا گیا تھا۔

تین بوسٹرز اور 27 انجنوں کے حامل اس راکٹ کے حوالے سے کہا جا رہا ہے کہ اس کی کامیابی اور ناکامی سے متعلق آئندہ 6 گھنٹے اہم ہیں، اگرچہ اس راکٹ کو کڑی نگرانی اور تجربات کی کامیابی کے بعد ہی روانہ کیا گیا ہے، تاہم پھر بھی اس کی کامیابی کی 100 یقین دہانی نہیں دی جا رہی۔

 

اگرچہ یہ راکٹ بیک وقت زمین سے 64 ٹن کا وزن لے جانے کی صلاحیت رکھتا ہے، تاہم اس میں ابھی بہت ہی کم مقدار میں وزن بھیجا گیا ہے۔

اس راکٹ میں نہ صرف کمپنی کے سربراہ کی کار بھیجی گئی ہے، بلکہ اس راکٹ میں جدید ترین تحقیقاتی آلات بھی نصب کیے گئے ہیں، جو خلا اور مریخ سے متعلق نئی تحقیقات میں مددگار ثابت ہوں گے۔

اس راکٹ کی کامیابی کے بعد کمپنی اسی راکٹ کی جانب مزید راکٹ اور معاون آلات و افراد بھیجے گی۔

اگر یہ تجربات کامیاب ہو جاتے ہیں تو ٹیسلا اینڈ اسپیس ایکس کمپنی 2024 میں پہلی بار انسانوں کو مریخ پر لے جائے گی۔

خیال رہے کہ اسی کمپنی نے حال ہی میں الیکٹرک ٹرک بھی متعارف کرائی تھی، یہ کمپنی الیکٹرک گاڑیوں سمیت دیگر ٹیکنالوجی آلات بھی بناتی ہے۔

کمپنی کا دعویٰ ہے کہ اس کے مریخ پر جانے والے راکٹ امریکی تحقیقی ادارے ناسا کے راکٹ کے مقابلے میں زیادہ ایڈوانس، بڑے اور طاقتور ہیں۔