396

حکومت نے ہشتم بورڈ کا فیصلہ واپس لے لیا

پشاور۔خیبر پختونخوا حکومت نے عدالتی احکامات پر عمل درآمد کرتے ہوئے جماعت ہشتم کے امتحانات تعلیمی بورڈوں کے زیر اہتمام منعقدکرنے کا فیصلہ واپس لے لیا ہے ٗ امسال ہشتم کے امتحانات پہلے سے مروجہ طریقہ کار کے مطابق ہی ہونگے صوبائی حکومت نے رواں تعلیمی سال میں جماعت ہشتم کے امتحانات کو تعلیمی بورڈز کے ذریعے لینے کا فیصلہ کیا تھا اور اس ضمن میں پشاور سمیت صوبے کے آٹھوں تعلیمی بورڈوں کو ہدایات بھی جاری کی تھیں۔

 تاہم نجی سکولوں کی ایک نمائندہ تنظیم نے حکومت کے مذکورہ فیصلے کو ہائی کورٹ ایبٹ آباد بینچ میں چیلنج کر دیا تھا اور چند روز قبل عدالت عالیہ کے ایبٹ آباد بینچ نے حکومت نے ہشتم کے امتحانات بورڈز کے ذریعے نہ لینے کے احکامات جاری کئے تھے۔

 مذکورہ صورتحال پر مشیر ابتدائی و ثانوی تعلیم ضیاء اللہ بنگش نے ”آج“ کے رابطے پر بتایا کہ عدالت عالیہ کے احکامات پر من و عن عمل درآمد کیا جائیگا ٗ حکومت نے ہشتم بورڈ کی پالیسی بنائی تھی جسے عدالت میں چیلنج کیا گیا اور عدالت نے حکم دیا ہے کہ ہشتم کے امتحانات بورڈ کے ماتحت نہ کئے جائیں لہٰذا عدالتی حکم پر مکمل عمل درآمد کیا جائیگا۔