529

پہاڑی پورہ لاپتہ نوجوان کی لاش نالہ سے برآمد

پشاور۔تھانہ پہاڑی پورہ کے علاقے کمبوہ سے 5 روز قبل لاپتہ ہونیوالے 19 سالہ نوجوان کی دلہ زاک روڈ پر واقع نالہ سے نعش برآمد کی گئی ہے نوجوان کو پھانسی دیکر قتل کرکے ہاتھ پاؤں باندھ کر نعش نالے میں پھینکی گئی تھی پولیس نے مقتول کے دو افغان مہاجر دوستوں کوگرفتار کرلیا جن پر ورثاء نے الزام عائد کیا ہے مقتول نوجوان کو انہوں نے ہی قتل کیا ہے پولیس نے مقدمہ درج کرکے مزید تفتیش شروع کردی ہے۔

پولیس کے مطابق انور زیب ولد جہانزیب سکنہ کمبوہ نے رپورٹ درج کرائی کہ25 مئی کو اس کا 19 سالہ بھائی عالمزیب سحری کے وقت گھر سے چائے لیکر اپنے دوستوں افغان مہاجر حمیداور حکمت کے پاس گیا تھا جس کے بعد وہ لاپتہ ہوا پولیس نے رپورٹ درج کرکے تفتیش شروع کی تو گزشتہ روز اطلا ع ملی کہ دلہ زاک روڈسے گزرنے والے نالہ میں ایک نوجوان کی نعش پڑی ہے جسے پھانسی دیکر قتل کیاگیا۔

اطلاع ملتے ہی پولیس موقع پہنچ گئی بعدازاں نعش کی عالمزیب کے نام کی شناخت ہوئی جس پر پولیس نے ورثاء کو اطلاع دی اور پوسٹ مارٹم کے بعد نعش انہیں حوالے کردی ہے پولیس کے مطابق ورثاء نے الزام عائد کیا ہے مقتول کو حمید اور حکمت نے قتل کیا ہے جس پر دونوں کوگرفتار کرکے مقدمہ درج کرکے مزید تفتیش شروع کردی گئی ہے ۔ مقتول عالمزیب کے بھائی انور زیب نے ابتدائی بیان دیتے ہوئے پولیس کوبتایاکہ حمید اور حکمت نے موٹر سائیکل ٗموبائل اور نقدی چھین کر بھائی کو بیددری سے قتل کیا اور نعش نالے میں پھینک دی ۔

انور زیب کے مطابق 25 مئی کو بھائی سحری کے وقت گھرانہیں کیلئے چائے لیکر گیا تھا اور پھر لاپتہ ہوا انور زیب کا کہناتھاکہ بھائی کی جیب میں 16 ہزار کی نقدی ٗ قیمتی موبائل اور موٹر سائیکل بھی تھی جو ملزموں نے چھین کر اسے قتل کردیا اور نعش نالے میں پھینک دی ۔دوسری جانب مقتول عالمزیب کی نعش گھر پہنچتے ہی کہرام مچ گیا اور لواحقین دھاڑیں مار مار روتے رہے مقتول عالمزیب سیلز مین تھا ورثاء نے الزام مقتول کو سحری لے جانیکی سزا دی گئی ہے دوسری جانب ہزاروں آشکبار آنکھوں کیساتھ مقتول کو سپرد خاک کردیاگیا اس موقع پر رقت آمیز مناظر دیکھنے کو ملے ۔