916

دو چینی کمپنیوں کا پاکستان میں پلانٹ لگانے کا اعلان

اسلام آباد۔چین کی دو نئی آٹو مینو فیکچرر کمپنیوں نے پاکستان آنے کی درخواست کردی ۔پاکستان نے 2016میں نئی آٹو پالیسی متعارف کرائی تھی ،اس پالیسی کے تحت پاکستان آنے کے لیے غور کرنے والی مینو فیکچررکمپنیوں کو کم ٹیکس سمیت بہت سی مراعات دینے کی پیشکش کی گئی تھی ۔پاکستانی حکومت کی اس پالیسی کو دیکھتے ہی دیکھتے بہت کامیابی ملی اور رینالٹ ،نسان،کیا،واکس ویگن اور ہنڈائی سمیت دیگر بڑی مینو فیکچرر کمپنیوں نے پاکستان میں پلانٹس لگانے کے لیے دلچسپی ظاہر کی ۔رینالٹ ،کیا اور ہنڈائی نے کراچی اور فیصل آباد میں اسمبلی پلانٹس پہلے ہی قائم کر لیے ہیں ۔

اب پاکستانیوں کے لیے ایک اور اچھی خبر آئی ہے کیونکہ چین کی دو اور مینو فیکچرر کمپنیوں نے مقامی مارکیٹ آنے کے لیے کارروائی شروع کردی ہے ۔یہ دونوں کمپنیاں چین کی ہیں جو لیفان موٹرز اور بیجنگ آٹو موبائل ورکس کے نام سے کام کر رہی ہیں ۔بیجنگ آٹو موبائل نے کیولیئر آٹوز کے ساتھ گاڑیوں کی اسمبلی کے لیے معاہدہ کیا ہے ۔

جبکہ لیفان موٹرز نے اپنی گاڑیوں کو پاکستانی مارکٹ میں لانے کے لیے پاک چائنہ موٹرزکے ساتھ ہاتھ ملا یا ہے ۔رپورٹس کے مطابق دونوں کمپنیوں نے وزارت انڈسٹری اور پراڈکشن سے گرین فیلڈ سٹیٹس لینے کے لیے درخواست دے دی ہے جس پر وزارت انڈسٹری اور پراڈکشن نے لیفان کو اجازت نامہ دے دیا ہے ۔ان کمپنیوں کی پاکستان آمد سے گاڑیوں کی صنعت میں مقابلہ بڑھ جائے گا جس کا براہ راست پاکستانیوں کو فائدہ ہو گا ۔