بریکنگ نیوز
Home / انٹرنیشنل / یہودی ہوں لیکن اگر امریکی مسلمانوں کا اندراج ہوا تو میں بھی مسلمان ہوں گی، میڈلن اولبرائٹ

یہودی ہوں لیکن اگر امریکی مسلمانوں کا اندراج ہوا تو میں بھی مسلمان ہوں گی، میڈلن اولبرائٹ


واشنگٹن ۔امریکا کی سابق وزیر خارجہ میڈلن اولبرائٹ اور بگ بینگ تھیوری کی اداکارہ نے ڈونلڈ ٹرمپ کے مسلم مخالف بیان پر شدید ردِ عمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر صدر ٹرمپ نے امریکی مسلمانوں کا الگ سے اندراج کیا تو میں احتجاجا خود کو مسلمان کے طور پر رجسٹر کراوں گی،اگر ان لوگوں کا اندراج کر نا ہے تو سفید فام مردوں کو بھی رجسٹر کیا جائے کیونکہ زیادہ تر سیریر کلرز اور بڑے پیمانے پر قتل عام کرنے والے سفید فام مرد ہیں۔ امریکی میڈیا کے مطابق انھوں نے ایک ٹویٹ میں لکھا کہ میں اظہار یکجہتی کے طور پر خود کو مسلمان کے طور پر رجسٹر کرانے پر تیار ہوں۔

ان کی اس ٹویٹ کو فوری طور پر ہزاروں افراد نے لائیک کیا۔ یاد رہے صدر ٹرمپ نے حالیہ ماہ میں امریکی مسلمانوں کو رجسٹر کرنے کے حوالے سے کوئی بیان نہیں دیا ہے تاہم 2015 میں ایک انٹرویو کے دوران انھوں نے ارادہ ظاہر کیا تھا کہ وہ یقیناًایسا کریں گے اور مسلمانوں کے امریکہ داخلے پر پابندی عائد کرنے کا مطالبہ کیا تھا لیکن اس کے بعد اس سے پیچھے ہٹ گئے تھے۔

صدر ٹرمپ کی صدارتی مہم کے دوران بڑی تعداد میں لوگ امریکی مسلمانوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کے طور پر کھڑے ہوئے تھے اور اب میڈلن اولبرائٹ کی ٹویٹ نے دیگر بہت ساروں کو بھی متاثر کیا ہے کہ وہ اس معاملے پر بولیں، جس میں مقبول بگ بینگ تھیوری کی اداکارہ مایم بیالک بھی شامل ہیں۔انھوں نے کہا میں یہودی ہوں اور میں اظہار یکجہتی کے طور پر خود کو مسلمان کے طور پر رجسٹر کرانے پر تیار ہوں ۔اگر ان لوگوں کا اندراج کر رہے ہیں جن کو ہم خطرہ سمجھتے ہیں تو سفید فام مردوں کو بھی رجسٹر کیا جائے کیونکہ زیادہ تر سیریر کلرز اور بڑے پیمانے پر قتل عام کرنے والے سفید فام مرد ہیں۔