بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / عالمی برادری مسئلہ فلسطین کے حل میں اپنا کردار دا کرے‘محمود عباس

عالمی برادری مسئلہ فلسطین کے حل میں اپنا کردار دا کرے‘محمود عباس


اسلام آباد۔ وزیراعظم محمد نواز شریف نے کہا ہے کہ عالمی برادری مسئلہ فلسطین کے حل میں اپنا کردار دا کرے‘ مسئلہ فلسطین حل کئے بغیر خطے میں امن قائم نہیں ہوسکتا‘ فلسطین سے اسرائیلی آبادی کے انخلاء کی حمایت کرتے ہیں‘ پاکستان فلسطین کے لئے اپنی حمایت جاری رکھے گا‘ مشرق وسطیٰ میں امن کے لئے کی جانے والی کوششوں کی حمایت کرتے رہیں گے۔ منگل کو فلسطین کے صدر محمود عباس کے ہمراہ مشترکہ نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے محمد نواز شریف نے کہا کہ فلسطینی صدر سے ملاقات انتہائی مفید رہی۔ فلسطین سے اسرائیلی آبادی کے انخلاء کی حمایت کرتے ہیں۔ مسئلہ فلسطین حل کئے بغیر خطے میں امن قائم نہیں ہوسکتا۔ عالمی برادری مسئلہ فلسطین کے حل میں اپنا کردار ادا کرے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان فلسطین کے لئے اپنی حمایت جاری رکھے گا۔ 1969 کی فلسطینی سرحدوں کو بحال کیا جانا چاہئے مشرق وسطیٰ میں امن یک لئے کی جانے والی کوششوں کی حمایت کرتے رہیں گے۔ اس موقع پر فلسطین کے صدر محمود عباس نے نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم سے ملاقات پر دلی خوشی ہے پاکستان مہمان نوازی کے لئے معروف ہے۔ فلسطین کے لئے امداد اور حمایت پر وزیراعظم نواز شریف کے شکر گزار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اسلام آباد میں فلسطینی سفارتخانے کی تعمیر میں تعاون پر بھی مشکور ہیں۔ ملاقات میں نواز شریف کو اسرائیلی مظالم اور مقبوضہ علاقوں کی صورتحال سے آگاہ کیا۔

مقبوضہ کشمیر کے مسئلے پر پاکستان کے موقف کی حمایت کرتے ہیں مسئلہ کشمیر کو اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق حل کیا جانا چاہئے۔ مسئلہ کشمیر کے حل کے لئے پاکستان بھارت مذاکرات کے حامی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ یروشلم سے امریکی سفارتخانے کی منتقلی پر تشویش ہے تعلیم اور مختلف شعبوں میں پاکستان کے تعاون پر شکر گزار ہیں۔ فلسطینی طلبہ پاکستان کے تعلیمی اداروں سے مستفید ہورہے ہیں ۔ محمود عباس نے کہا کہ خطہ میں دہشت گردی اور انتہا پسندی کے معاملے پر بھی بات ہوئی ہے۔ قبل ازیں پاکستان اور فلسطین کے درمیان وفود کی سطح پر ملاقات ہوئی۔ وزیراعظم نواز شریف نے پاکستان کے وفد کی قیادت کی جبکہ فلسطینی وفد صدر محمود عباس کی سربراہی میں ملاقات میں شریک ہوا۔ ملاقات میں دونوں ملکوں کے درمیان مختلف شعبوں میں تعاون بڑھانے پر بات چیت کی گئی۔