بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / کچھ لوگ مذہب کا غلط نام استعمال کرکے افراتفری پھیلاناچاہتے ہیں،چوہدری نثار

کچھ لوگ مذہب کا غلط نام استعمال کرکے افراتفری پھیلاناچاہتے ہیں،چوہدری نثار


لورالائی۔وزیرداخلہ چوہدری نثار علی خان نے کہا ہے کہ کچھ لوگ ہیں جو بلوچستان اور پاکستان میں امن نہیں چاہتے ،وہ نہیں چاہتے کہ ہمارے بچے خوش و خرم زندگی گزاریں ، وہ نہیں چاہتے کہ اس خطے میں امن و امان ہو،اللہ تعالیٰ نے اسلام کا مذہب اس لیے دنیا میں پھیلایا کہ امن کا پیغام آئے،اللہ تعالیٰ فساد اور جھگڑے کو ناپسند فرماتے ہیں،اسلام کا نام امن ہے،یہ جو فسادی بلوچستان کے نوجوانوں کو استعمال کرکے خون خرابہ کرنا چاہتے ہیں، ان کا ایجنڈا کیا ہے؟،کچھ لوگ ہمارے ا زلی دشمن سے پیسہ لیکرعیش کرتے ہیں، اور بلوچستان کے نوجوانوں کو قربانی کا بکر ا بناتے ہیں۔

کچھ لوگ مذہب کا غلط نام استعمال کرکے یہاں افراتفری کا نظام رائج کرنا چاہتے ہیں، سی پیک پر تیزی سے کام ہورہا ہے جبکہ دشمنوں کی سازشیں بھی سی پیک کے خلاف تیزی سے پنپ رہی ہیں،سیکیورٹی فورسزکی قربانیوں، کوششوں سے بلوچستان میں امن آیا ، ہمارادشمن کتناموذی ،ازلی، بے ایمان کیوں نہ ہوفورسز نے انکو نیست و نابود کردیا ہے۔ملکی سیکیورٹی کیلئے عام بجٹ کے علاوہ اس پر 70ارب خرچ کئے ہیں ترقی بلوچستان اور پاکستان کو آواز دے رہی ہے ،وہ دن دور نہیں جب دہشتگردی مکمل ختم کی جائے گی،فتح قریب ہے ،بلوچستان کی ترقی دنیا دیکھے گی۔وہ ہفتہ کو لورالائی میں ایف سی کی 60ویں پاسنگ آؤٹ پریڈکی تقریب سے خطاب کر رہے تھے۔پاسنگ آؤٹ پریڈ میں 1079مقامی ریکروٹس سمیت 5434پاس آؤٹ ہوئے۔وزیرداخلہ چوہدری نثار علی خان نے کہا کہ یہ صرف خوشی کا موقع نہیں بلکہ اللہ تعالیٰ کا شکر بجا لانے کا موقع ہے،آج آپ عملی زندگی میں داخل ہورہے ہو،پاس آؤٹ ہونیوالوں کی خوشیوں میں شریک ہوکر پر مسرت ہوں،آپ نے جو یہ وردی پہنی ہے یہ عام وردی نہیں اس یونیفارم کی آن بان میں شہیدوں کا خون شامل ہے، آپ نے اس وردی کا مان رکھنا ہے۔انہوں نے کہاکہ کچھ لوگ ہیں جو بلوچستان اور پاکستان میں امن نہیں چاہتے ،کچھ لوگ نہیں چاہتے ہیں کہ ہمارے بچے خوش و خرم زندگی گزاریں ، وہ نہیں چاہتے کہ ہم تعلیم حاصل کریں ،غریب خاندانوں کی زندگی میں بہتری آئے اور وہ نہیں چاہتے کہ اس خطے میں امن و امان ہو،اللہ تعالیٰ کی رحمت اور برکت آپکے ساتھ ہے ۔وزیرداخلہ چوہدری نثار نے کہا کہ اللہ تعالیٰ نے اسلام کا مذہب اس لیے دنیا میں پھیلایا کہ امن کا پیغام آئے،اللہ تعالیٰ فساد اور جھگڑے کو ناپسند فرماتے ہیں،اسلام کا نام امن ہے،یہ جو فسادی بلوچستان کے نوجوانوں کو استعمال کرکے خون خرابہ کرنا چاہتے ہیں، ان کا ایجنڈا کیا ہے؟،کچھ لوگ ہمارے ا زلی دشمن سے پیسالیکرعیش کرتے ہیں، اور بلوچستان کے نوجوانوں کو قربانی کا بکر ا بناتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ کچھ لوگ مذہب کا غلط نام استعمال کرکے یہاں افراتفری کا نظام رائج کرنا چاہتے ہیں،ایف سی کے نوجوانوں یہ آپ کی ذمہ داری ہے کہ اپنے زور و بازو سے اللہ کا نام لے کر ان فسادیوں کا قلع قمع کریں ،ایف سی کی کاوشوں کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں ، سیکیورٹی فورسزکی قربانیوں، کوششوں سے بلوچستان میں امن آیا ، ہمارادشمن کتناموذی ،ازلی، بے ایمان کیوں نہ ہوفورسز نے انکو نیست و نابود کردیا ہے۔وزیرداخلہ نے کہا کہ جب سے منصب سنبھالاہے ہمیشہ کہاکہ یہ آپکے لوگ ہیں ان سے محبت سے پیش آئیں ،بلوچستان کے عوام نے بڑے مسائل دیکھے ہیں بہت قربانیاں دی ہیں ، ایف سی کے نوجوان وطن کیلئے اہم کردار ادا کررہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ دہشتگردی کے خلاف جنگ کو منطقی انجام تک پہنچائیں گے ، خوشی ہے کہ ایف سی اپنی ذمے داری سے بڑھ کر کردار ادا کررہی ہے ، وزیراعظم سے ایف سی کی مزید مدد کی درخواست کروں گا، امن ، تعلیم اور دیگر شعبوں میں ایف سی کاکردار حقوق العباد کی ادائیگی ہے،بلوچستان کی سیکیورٹی سے متعلق ایف سی نے کلیدی کردار ادا کیا ہے ، اب صرف بچے کچے دہشتگردوں کو انجام تک پہنچانا ہے ، سول فورسز پاک فوج کے ساتھ سرحد پر دشمن کا مقابلہ کرتی ہیں ،سول فورسز اندرون ملک پولیس کے ساتھ کردار ادا کررہی ہیں،ایف سی اس اچھے کام کو جاری رکھے ، فتح قریب ہے ، پاکستان کی سیکیورٹی فورسز کو فتح حاصل ہوچکی ہے۔وزیرداخلہ چوہدری نثار علی خان نے کہا کہ سی پیک پر تیزی سے کام ہورہا ہے،دشمنوں کی سازشیں بھی سی پیک کے خلاف تیزی سے پنپ رہی ہیں۔

ملکی سیکیورٹی کیلئے عام بجٹ کے علاوہ اس پر 70ارب خرچ کئے ہیں کیونکہ پاکستان کی سکیورٹی ہمیں بہت عزیز ہے،یہ علاقہ ترقی کا خطہ بنے گا،بلوچستان کی ترقی دنیا دیکھے گی، ترقی بلوچستان اور پاکستان کو آواز دے رہی ہے ،وہ دن دور نہیں جب دہشتگردی مکمل ختم کی جائے گی۔قبل ازیں آئی جی ایف سی میجر جنرل ندیم انجم نے وزیرداخلہ کو بلوچستان میں امن و امان کی مجموعی صورتحال پر بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ ایف سی سیکیورٹی کے ساتھ سماجی سرگرمیوں میں بھی بڑھ چڑھ کر حصہ لے رہی ہے،بلوچستان میں ایف سی 64سکول چلارہی ہے،سکولوں میں 19ہزار سے زائد بچے تعلیم حاصل کر رہے ہیں۔وزیرداخلہ چوہدری نثار کو بریفنگ دی گئی کہ ایف سی نے 65 ہزار سے زائد مریضوں کو مفت طبی سہولیات فراہم کی ہیں،ایف سی تعلیم،صحت اور سماجی خدمات جیسے شعبوں میں اپنا کردار ادا کر رہی ہے،مختلف منصوبوں پر 65کروڑ 50لاکھ روپے خرچ کیے جاچکے ہیں۔