Home / شوبز / سونونگھم اذان بارے بیان دے کر پھنس گئے

سونونگھم اذان بارے بیان دے کر پھنس گئے

ممبئی ۔ بالی وڈ گلوکارسونو نگھم کو اذان کے بارے میں بیان دینا مہنگا پڑگیا،یاسمین ارورہ منشی نامی ایک خاتون نے سماجی میڈیا پر گلوکار کو خوب سنائی،کہتی ہیں بی جے پی کو خوش کرنے کے لیے یہ بیان دیا گیا،ویڈیو پیغام میں یاسمین کا کہنا تھا کہ بیف کھانے کے نام پر خواتین کی عصمت دری کی جاتی ہے،گاؤرکھشاؤں نے کئی مسلمانوں کوقتل کیا تب سونو نگھم کو ٹوئٹ کرنا یاد نہیں آیا۔

یاسمین اروڑہ اس سے پہلے بھارت میں بڑھتی انتہا پسندی کی وجہ سے نریندر مودی پربھی تنقید کرچکی ہیں۔واضح رہے کہ مغربی بنگال کے اقلیتی کونسل ممبر سید شاہ عاطف علی قادری نے سونونگھم کے اذان سے متعلق ٹویٹ پر فتویٰ جاری کیا تھا اور سونو نگھم کے بال کاٹنے اور جوتوں کے ہار پہنانے پر 10 لاکھ روپے انعام کا اعلان کیاتھا،انہوں نے کہا کسی کو بھی کسی دوسرے مذاہب کے خلاف بات کرنے کا حق نہیں،سونونگھم جیسے لوگوں کو ملک سے نکال دینا چاہئے،بالی ووڈ اداکار نے سستی شہرت حاصل کرنے کے لئے یہ سب کچھ کیا۔