بریکنگ نیوز
Home / بزنس / محکمہ ایکسائز کی 9ارب کی وصولیاں

محکمہ ایکسائز کی 9ارب کی وصولیاں


پشاور۔محکمہ ایکسائز ،ٹیکسیشن اینڈ نارکاٹکس کنٹرول نے چار سال کے دوران نو ارب سے زائد کی وصولیاں کی ہیں جبکہ ایک ہزار سے زائد نادہندگان کی املاک کو سیل کرکے کروڑوں روپے کا ٹیکس حاصل کیاجبکہ ٹیکس سے انکاری کارخانو مارکیٹ کے مالکان کو ٹیکس نیٹ میں شامل کیا خیبر پختونخوا حکومت نے صوبائی محکمہ ایکسائز ٹیکسیشن اینڈ نارکاٹکس کنٹرول کی چار سالہ کارکردگی رپورٹ جاری کردی ہے صوبائی اسمبلی میں پیش کردہ چارسالہ کارکردگی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ محکمہ نے موجودہ حکومت کے مئی2013سے فروری2017تک مختلف ٹیکسوں کی مد میں بہترین وصولی کا نمونہ پیش کیا ، محکمہ کی تحریری رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ مالی سال2012-13کے دوران محکمہ نے1ارب61کروڑ، 2013-14میں1ارب77کروڑ،2014-15میں1ارب 93کروڑ،2015-16میں2ارب24کروڑ اور2016-17کے ابتدائی 8ماہ کے دوران1ارب40کروڑ روپے مختلف ٹیکسوں کی مد میں حاصل کئے ہیں، رپورٹ میں کہا گیا کہ گزشتہ سال کے دوران صوبہ بھر میں بڑیے پیمانہ پر ٹیکس نادہندگان کے خلاف کاروائی کی گئی۔

جس کے نتیجہ میں1ہزار سے زئاد نادہندگان شہر جائیداد ٹیکس کے املاک کو سیل کیا گیا اور ان سے کرڑوں روپے کی وصولی کی گئی اسی مہم کے دوران صوبائی حکومت کی بہترین حکمت عملی کے تحت کارخانو مارکیٹ حیات آباد کے مالکان سے ان کے جائیداد کا ٹیکس وصول کیا گیا حالانکہ کارخانو مارکیٹ پشاور کے حدود میں شامل ہونے کے باوجود ٹیکس کی ادائیگی سے انکاری تھے،محکمہ نے گزشتہ تین سالوں کے دوران تقریباً450غیر قانونی اور جوری شدہ گاڑیوں کو تحویل میں لیا جن میں سے کچھ کو اصل مالکان کے حوالے کیا گیاباقی گاڑیوں کو بحق سرکار ضبط کیا گیا۔

محکمہ نے منشیات اور غیر قانونی اسلحہ کی ترسیل کے خلاف موثر کاروائی کی جس کے تحت2010کلو چرس،56کلو ہیروئن،2کلو افیون،11500کارتوس،26میگزین،59رائفل پستول،900کلو غیر قانونی کیمیکل،1650لیٹر شراب، کروڑوں روپے مالیت کے نوادرات اور منی لانڈرنگ کیس میں1کروڑ40لاکھ روپے ضبط کئے، رپورٹ میں کہا گیا کہ صوبائی حکومت نے رواں مالی سال کے دوران انفراسٹرکچر ڈدیلپمنٹ سیس کے نام سے ایک نئے ٹیکس کی وصلی شروع کرد ی ہے جس سے نہ صرف صوبائی محاصل میں خاطر خواہ اضافہ ہوگا بلکہ صوبہ کا وفاق اور دسورے مالیاتی اداروں پر انحصار کم ہوجائیگا اس ٹیکس کی مد میں ابتدائی اٹھ ماہ کے دوران22کروڑ روپے کی وصولی کی گئی ہے