بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / جعلی امن کمیٹیوں کے خاتمے کے احکامات

جعلی امن کمیٹیوں کے خاتمے کے احکامات

پشاور ۔قومی علماء اور مشائخ کونسل نے خیبر پختونخواحکومت کو اپنی سفارشات پیش کر دی ہیں جسے صوبائی حکومت نے تمام متعلقہ محکموں کو ضروری کاروائی کے لئے ارسال کر دیا ہے۔صو بائی محکمہ داخلہ کے ذرائع کے مطابق ان سفارشات میں متعلقہ اداروں سے کہا گیا ہے کہ ہر سطح پر امن کمیٹیوں میں علماء کی شرکت کو یقینی بنانے کے لئے حقیقی علماء کے ممبر شپ اور جعلی امن کمیٹیوں کے خاتمے کو ممکن بنایا جائے ۔

ایسے موضوعات جہاں قانون خاموش ہو وہاں تمام طبقہ فکر کے علماء غلط قانون سازی سے پرہیز کریں اور جو قانون موجود ہیں ان پر حقیقی روح و دیا نتداری سے عمل کیا جائے اسی طرح تمام علماء خوا ہ و کسی بھی جماعت سے ہوں دہشت گردوں کو رد کریں فرقہ وارانہ تقاریر، مواد اور ویڈیوز پر پابندی لگائیں اور اسلحہ نمائش پر پابندی و حوصلہ شکنی کی جائے انبیاء کرام، اصحاب کرام، اہل بیت، امت المومنین اور مسلمان فاضل علماء و مشائخ کی حرمت کا خصوصی خیال رکھاجائے اور حرمت کی خلاف ورزی کرنے والوں کو انصاف کے کٹہرے میں لایا جائے ٗمساجد، مدرسوں اور امام بار گاہوں میں لاؤڈسپیکر کے غلط استعمال کو بند کیا جائے اور مرتکب افراد کو سزا دی جائے معاشرے کی اصلاح کے لئے ذرائع ابلاغ (میڈیا) پر نشر و اشاعت کے لئے مثبت پروگرام تشکیل دیئے جائے جبکہ قابل اعتراض مواد کی نشرواشاعت کو روکا جائے۔