بریکنگ نیوز
Home / انٹرنیشنل / ایشین ڈویلپمنٹ بینک کا50 واں سالانہ اجلاس

ایشین ڈویلپمنٹ بینک کا50 واں سالانہ اجلاس

یوکوہاما ۔پاکستان اور بھارت کے وزرائے خزانہ جاپان میں آمنے سامنے آئے تاہم دونوں ملکوں کے درمیان تعلقات میں کشیدگی کا اثر اس تقریب میں بھی نمایاں طور پر دیکھا گیا۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق وزیر خزانہ اسحٰق ڈار ان کے بھارتی ہم منصب ارون جیٹلی نے ایشین ڈویلپمنٹ بینک کے 50 ویں سالانہ اجلاس کے موقع پر منعقدہ خصوصی مباحثے میں شرکت کی اس موقع پر بھارتی وزیر خزانہ ارون جیٹلی نے روایتی سرد مہری کا مظاہرہ کرتے ہوئے طنزیہ گفتگو کی اور چین کے ‘ایک خطہ ایک سڑک’ ویژن کی کھل کر مخالفت کی۔

ارون جیٹلی نے کہا کہ بھارت کو اس تجویز پر سنگین تحفظات ہیں کیوں کہ اس میں ملکوں کی خودمختاری کا مسئلہ ہے۔میرا خیال ہے کہ ایک دوسرے سے جڑنے کا خیال اچھا ہے لیکن ایک خاص پیشکش جس کا تذکرہ ابھی آپ نے کیا اس میں کئی اور مسائل بھی ہیں جن کی تفصیلات میں جانے کے لیے یہ فورم مناسب نہیں،دوسری جانب اسحٰق ڈار نے کہا کہ ‘خطے اور اسے سے آگے کے ملکوں سے جڑنے کے لیے یہ انتہائی اہم سمت ہے اور میرا خیال ہے کہ ایک خطہ ایک سڑک انتہائی اچھا اقدام ہے، پاکستان اس کا حصہ ہے اور اس خیال کو زیادہ سے زیادہ فروغ بھی دیتا ہے۔

اسحٰق ڈار نے کہا کہ بین ال علاقائی تجارت پر توجہ مرکوز کرنی چاہیے اور ایک دوسرے سے بہتر طریقے سے منسلک ہونا چاہیے۔انہوں نے چائنا پاکستان اقتصادی راہداری اور سینٹرل ایشیا ریجنل اکنامک کوآپریشن کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ان کا مقصد پاکستان، وسطی ایشیائی ممالک، بھارت اور ایران کو منسلک کرنا ہے۔ اسحٰق ڈار نے کہا کہ ایک دوسرے پر انحصار کرکے ہی آگے بڑھا جاسکتا ہے۔