بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / مستونگ: ڈپٹی چیئرمین سینیٹ کےقافلے کےقریب دھماکا،25 جاں بحق

مستونگ: ڈپٹی چیئرمین سینیٹ کےقافلے کےقریب دھماکا،25 جاں بحق

کوئٹہ: صوبہ بلوچستان کے شہر مستونگ میں ڈپٹی چیئرمین سینیٹ عبدالغفور حیدری کے قافلے کے قریب ہونے والے دھماکے کے نتیجے میں 25 افراد جاں بحق جبکہ جمعیت علمائے اسلام (ف) کے رہنما سمیت 42 افراد زخمی ہوگئے۔

بلوچستان حکومت کے ترجمان انوار الحق کاکڑ نے دھماکے میں 25 افراد کی ہلاکت کی تصدیق کی، جن میں ڈائریکٹر اسٹاف سینیٹ افتخار مغل بھی شامل ہیں۔

مولانا عبدالغفور حیدری سمیت دھماکے کے زخمیوں کو سول ہسپتال مستونگ منتقل کیا گیا، جہاں ایمرجنسی نافذ کردی گئی تھی، بعدازاں ڈپٹی چیئرمین سینیٹ کو سی ایم ایچ کوئٹہ منتقل کردیا گیا۔

دھماکے کی اطلاع ملتے ہی لیویز اور ایف سی اہلکار جائے وقوع پر پہنچے اور علاقے کو گھیرے میں لے کرپ تحقیقات کا آغاز کردیا گیا۔

دھماکے میں ڈپٹی چیئرمین سینیٹ عبدالغفور حیدری کے قافلے کو نشانہ بنایا گیا—۔ڈان نیوز
ریسکیو ذرائع کے مطابق دھماکے میں جاں بحق اور زخمی ہونے والوں میں سے زیادہ تر کا تعلق جمعیت علمائے اسلام (ف) سے ہے۔

دھماکے کی نوعیت کے حوالے سے متضاد اطلاعات سامنے آرہی ہیں اور ابھی تک اس بات کی تصدیق نہیں ہوسکی کہ دھماکا خودکش تھا یا ریموٹ کنٹرول کے ذریعے کیا گیا۔

عینی شاہدین کے مطابق دھماکے کے بعد فائرنگ کی آوازیں بھی سنائی دیں۔

مولانا عبدالغفور حیدری جمعیت علمائے اسلام (ف) سے تعلق رکھتے ہیں، پارٹی ذرائع کے مطابق مولانا اپنے ساتھیوں سمیت دستار بندی کی تقریب میں جارہے تھے کہ ان کے قافلے کو نشانہ بنایا گیا۔

مولانا عبدالغفور حیدری 1990 کے عام انتخابات میں جمعیت علمائے اسلام کے ٹکٹ پر بلوچستان اسمبلی کے رکن منتخب ہوئے، جبکہ وہ پارلیمانی قائد بھی رہ چکے ہیں۔

1995 میں مولانا عبدالغفور حیدری جے یو آئی (ف) کے سیکریٹری جنرل منتخب ہوئے، اس منصب پر وہ پانچ مرتبہ منتخب ہوئے اور اب بھی فائز ہیں۔

وزیراعلیٰ بلوچستان نواب ثناء اللہ زہری نے مستونگ میں ہونے والے دھماکے کی شدید مذمت کی۔

مستونگ بلوچستان کا حساس علاقہ تصور کیا جاتا ہے اور شدت پسند یہاں اکثروبیشتر حکومتی عہدیداران، سیکیورٹی فورسز اور عام شہریوں کو نشانہ بناتے رہتے ہیں۔