بریکنگ نیوز
Home / دلچسپ و عجیب / چینی طالب علم چاندپر قید

چینی طالب علم چاندپر قید


بیجنگ ۔ چین نے 2036ء تک یورپ کی مدد سے چاند پر ایک گاؤں بسانے کا منصوبہ بنایا ہے‘ اس مقصد کیلئے اس نے زمین پر ایک ’’چاند کا قلعہ‘‘تیار کیا ہے‘ جہاں ایسا ماحول پیدا کیا گیا ہے جو چاند پر پایا جاتا ہے۔ بی ہینگ یونیورسٹی کے چار طالبعلموں کو 1720 سکوائر فٹ کے اس کیبن نما قلعے میں داخل کرکے وہاں بند کردیا گیا ہے۔

اس ٹیسٹ کیلئے دو مرد اور دو خواتین منتخب کئے گئے تھے تاکہ جانچا جاسکے کہ چاند کے ماحول میں زندگی کے تحفظ کیلئے کس قسم کے نظام کی ضرورت ہوگی۔ یہ طالبعلم اس کیبن میں ابتدائی طور پر دو ماہ کیلئے قیدکئے گئے ہیں جس کے بعد ایک اور گروپ کو 200 دن کیلئے اس طرح کے تجربے سے گزرنا پڑے گا۔ چین کی اسپیس ایجنسی کے سیکرٹری جنرل تیان یولونگ نے اپریل میں اس بات کا انکشاف کیا تھا کہ یورپین اسپیس ایجنسی کے ساتھ ان کے ملک کے مذاکرات چل رہے ہیں۔

اب اس نئے تجربے میں ایسی ٹیکنالوجی کا استعمال کیا جارہا ہے جو چاند پر ایک گاؤں کے قیام کیلئے ضروری ہوسکتی ہے۔ لونر پیلس نامی یہ جگہ دنیا میں اس طرح کی تیسری جبکہ چین میں پہلی تجربہ گاہ ہے۔ اس جگہ پر تجرباتی فصلیں اور سبزیاں اگانے کا تجربہ بھی کیا جائے گا۔