بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / خیبر پختونخوا اسمبلی اختلافات بھلا کر متحد

خیبر پختونخوا اسمبلی اختلافات بھلا کر متحد

پشاور۔خیبر پختونخواسمبلی تمام اختلافات بھلاکرسانحہ مستونگ پر متحد ہوگئی تمام جماعتوں کے رہنماؤں نے ڈپٹی چیئر مین سینٹ کے قافلہ پر حملے اور قیمتی انسانی جانو ں کے ضیاع کی شدید مذمت کرتے ہوئے اسے بزدلانہ فعل قراردیاہے اورواضح کیاہے کہ قوم اس قسم کے ہتھکنڈوں سے کبھی مرعوب نہیں ہوگی ساتھ ہی وفاقی حکومت سے مطالبہ کیاہے کہ حالات کی بہتری اورقیام امن کے لیے پڑوسیوں کے ساتھ تعلقات کی بہتری سمیت ہر قد م اٹھا یا جائے صوبائی اسمبلی کے اجلاس کے دوران اپوزیشن لیڈر مولانا لطف الرحمان نے مستونگ واقعہ کی طرف ایوان کی توجہ مبذول کراتے ہوئے کہاکہ ہم پر حملوں کاسلسلہ جاری ہے مگر ہم ان قوتوں کو باربار بتاناچاہتے ہیں کہ اس قسم کے اقدامات سے ملک اور دین کی کوئی خدمت نہیں ہورہی ۔

نہ ہی اس قسم کی حرکتوں سے ہمیں ڈرایادھمکایا جاسکتا ہے سینئر صوبائی وزیر عنایت اللہ نے کہاکہ ہم اس واقعہ کی شدید مذمت کرتے ہیں اور دہشتگردی کو ملک وقوم کے لیے ناسور سمجھتے ہیں پی پی پی کے فخر اعظم وزیر نے کہاکہ یہ ملک کی سلامتی پر حملہ ہے صوبائی وزیر انیسہ زیب طاہر خیلی نے کہاکہ اس قسم کے حملوں کامقصد ملک میں انتشارپھیلانا ہے مگر ہم یہ سازش ناکام بنادینگے ،صوبائی وزیر شاہ فرمان نے کہاکہ یہ پوری سیاسی قیادت پرحملہ ہے۔

اس ملک کے سیاستدانوں نے بہت زیادہ قربانیاں دی ہیں ہماری ہمدردیاں متاثرین کیساتھ ہیں ن لیگ کی آمنہ سردار نے کہاکہ دہشتگر د پھر سے خوف وہراس کی فضاء پید ا کرنا چاہتے ہیں اے این پی کے سردار حسین بابک نے کہاکہ ملک میں دہشتگردی کی نئی لہر کا خدشہ ہے ہمیں حالات کی بہتری کے لیے تمام پڑوسیوں کے ساتھ تعلقات بہتر بنانے کی ضرورت ہے بعدازاں ایوان میں شہداء کے درجات کی بلندی اورزخمیوں کی جلد صحت یابی کے لیے دعا کرائی گئی