بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / ریپڈ ٹرانزٹ منصوبے کیلئے متعدد کمپنیوں کی دلچسپی

ریپڈ ٹرانزٹ منصوبے کیلئے متعدد کمپنیوں کی دلچسپی

پشاور۔صوبائی دارالحکومت میں بس ریپڈ ٹرانزٹ منصوبے کیلئے 19کمپنیوں نے دلچسپی ظاہر کر دی ہے ٗمنصوبہ 240دنوں کی ریکارڈ مدت میں مکمل کیا جائے گا جس کیلئے 19جون کو ٹینڈز کھولے جائیں گے منصوبے پر کام کا آغاز اگست سے ہوگا اور مارچ2018ء میں منصوبہ پایا تکمیل تک پہنچے گا میٹرو طرز کے منصوبے پر 56ارب روپے لاگت کا تخمینہ لگایا گیا ہے جس میں 48ارب روپے ایشیاء ترقیاتی بینک دیگا صوبائی حکومت نے منصوبے کی تعمیر کے دوران ٹریفک کو رواں دواں رکھنے کیلئے متبادل ٹریفک مینجمنٹ پلان بھی ترتیب دیدیا ہے ۔

ریپڈ بس ٹرانزٹ منصوبہ تین فیزوں میں مکمل ہوگا جس کا پہلا فیز چمکنی سے قلعہ بالا حصار ٗ دوسرا امن چوک اور تیسرا فیز باب پشاور فلائی اوور تک مکمل کیا جائیگا منصوبے کی کل لمبائی 30کلو میٹر ہے جس میں 31سٹیشنز اور 10انڈر پاسز بھی شامل ہیں بس ریپڈ ٹرانزٹ کے روٹ پر سائیکل ٹریک بھی بنایا جائے گا گزشتہ روز ڈائریکٹر جنرل پی ڈی اے سلیم حسن ووٹو کے زیر صدارت اجلاس میں منصوبے کا جائزہ لیا گیا اور ٹینڈر 19جون کو کھولنے کا فیصلہ کیا گیا ماہرین کے مطابق بس ریپڈ ٹرانزٹ کے ذریعے روزانہ 60ہزار شہری سفر کرینگے اور انہیں آسان اور سستی سفری سہولیات میسر آئیں گی۔