بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / کوہاٹ ڈویژن کے لئے ڈیڑھ ارب کی فراہمی

کوہاٹ ڈویژن کے لئے ڈیڑھ ارب کی فراہمی

پشاور ۔ وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا پرویز خٹک نے(ضلع کے وسائل ضلع کی ترقی کیلئے خرچ کرنے کی بنیاد پر) کوہاٹ ڈویژن کیلئے گیس رائلٹی کی مد میں ڈیڑھ ارب روپے کی فوری فراہمی کی منظوری دی ہے اور اس فنڈ کے عوامی فلاح و بہبود اور علاقائی ترقی میں شفاف استعمال کے لئے ترقیاتی سکیمیں لانے کی ہدایت کی ہے تاکہ انہیں مالی سال2017-18 کے ترقیاتی بجٹ میں سمویاجاسکے۔ وہ وزیراعلیٰ ہاؤس پشاور میں کوہاٹ ڈویژن کے اضلاع کرک ، ہنگو اور کوہاٹ کی گیس رائیلٹی کے حوالے سے اجلاس کی صدارت کر رہے تھے صوبائی وزیر قانون امتیاز شاہد قریشی،ایم پی ایز ضیاء اللہ بنگش، گل صاحب خان، سیکرٹری خزانہ شکیل قادر، سیکرٹری منصوبہ بندی و ترقیات شہاب علی شاہ، کمشنر کوہاٹ تینوں اضلاع کے ڈپٹی کمشنروں اور دیگر متعلقہ حکام نے اجلاس میں شرکت کی۔

اجلاس میں کوہاٹ ڈویژن کے لئے گیس رائلٹی اور اسکے مفاد عامہ اور علاقائی ترقی میں استعمال کیلئے ترقیاتی سکیموں اور متعلقہ امور پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا وزیراعلیٰ نے نئے مالی سال کیلئے گیس رائلٹی کی مد میں کوہاٹ ڈویژن کیلئے 1.5 ارب روپے کی منظوری دی اور عندیہ دیا کہ ضرورت پڑنے پر مزید وسائل بھی فراہم کئے جائینگے انہوں نے رائلٹی کے مطابق فوری طور پر ترقیاتی سکیمیں بنانے اور جمع کرانے کی ہدایت کی اور کہا کہ صوبائی حکومت گیس اور تیل پیدا کرنے والے اضلاع میں انفراسٹرکچر کی بہتری، سماجی خدمات کے اداروں کی فعالیت اور ان اضلاع کی مجموعی ترقی وبحالی کے لئے منصفانہ فنڈز کی فراہمی یقینی بنائے گی۔

پرویز خٹک نے کہا کہ جنوبی اضلاع میں دریافت قدرتی ذخائر اگر چہ مجموعی قومی ترقی کا ذریعہ ہیں تا ہم ہماری حکومت سمجھتی ہے کہ کسی علاقے کے وسائل میں مقامی لوگوں کا پہلا حق بنتا ہے جسکو تسلیم کرنے سے ہی ترقی اور خیر سگالی کو فروغ اور امن و امان کو استحکام ملتا ہے وزیراعلیٰ نے کہا کہ صوبائی حکومت صوبہ بھر کے لئے یکساں ترقیاتی حکمت عملی پر کاربند ہے صوبہ کے طول و عرض میں وسائل کا منصفانہ استعمال یقینی بنایا جا رہا ہے جبکہ مرکز سے صوبے کے آئینی اور قانونی حقوق واگذار کرانے کے لئے بھی مخلصانہ کوششیں کی گئی ہیں۔ عوام کی فلاح و ترقی اور انکے جائز حقوق کا تحفظ اور وسائل کی منصفانہ فراہمی یقینی بنانا ہمارے اولین فرائض میں شامل ہے ۔وزیراعلیٰ نے کہا کہ صوبائی حکومت نے ایک ایسے مضبوط شفاف اور قابل عمل سسٹم کی بنیاد رکھ دی ہے جس میں حق دار کا حق محفوظ ہے کسی سے نا انصافی یا عوامی وسائل میں خرد برد کی گنجائش موجود نہیں۔