بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / عقل سے عاری شخص پانامہ کے نام پر اپنے عزائم کی تکمیل چاہتا ہے،مولانا فضل الرحمن

عقل سے عاری شخص پانامہ کے نام پر اپنے عزائم کی تکمیل چاہتا ہے،مولانا فضل الرحمن


فیصل آباد۔تاریخی دھوبی گھاٹ پارک میں جمعیت کی صد سالہ تقریبات کے سلسلے میں منعقدہ ’مفتی محمود کانفرنس‘ سے خطاب کرتے ہوئے جمعیت علماء اسلام ف کے سربراہ وچیئرمین کشمیر کمیٹی مولانا فضل الرحمن نے کہا ہے کہ عمران خان کو یہودی نہیں یہودی ایجنٹ کہا تھااور خوب سوچ سمجھ کر کہا تھا ،حکیم سعید نے 1996میں اپنی کتاب میں عمران خان کو یہودی ایجنٹ کہ دیا تھا ۔ میں فقیر آدمی ہوں مگر آج میری باتوں کی تصدیق ہورہی ہے ۔ عقل سے عاری شخص پانامہ کے نام پر اپنے عزائم کی تکمیل چاہتا ہے ، امریکہ دنیا کی سب سے بڑی دہشت گرد ریاست ہے۔

جو اپنے کارندوں کے ذریعے اسلامی دنیا میں تباہی پھیرنے کے بعد سیاستدانوں کو کرپشن کے نام پر اور مذہبی رہنماؤں کو دہشت گردی کے نام پر جیلوں میں ڈالنا چاہتا ہے۔خیبر پختوانخوامیں تحریک انصاف کے اپنے پسندیدہ نیب، چیف سیکرٹری،پاور پراجیکٹ کا ایم ڈی اور خیبر بنک کا سربراہ پی ٹی آئی حکومت کے وزیر اعلیٰ اور وزیروں کی کرپشن پر مستعفی ہوچکے ہیں۔ آن لائن کے مطابق مولانا فضل الرحمن نے کہا کہ پنجاب کے عوام اور میڈیا کو یہ نظر کیوں نہیں آتا؟ مسلم لیگ ن پنجاب میں خود پی ٹی آئی کو راستہ دے رہی ہے۔

جے یوآئی نے ہمیشہ اپنے نظریات پر دوسری سیاسی قوتوں سے ہاتھ ملایا۔ اصولوں اور نظریات پر کبھی سمجھوتہ نہیں کیا۔ ن لیگ کا عمران خان سے اقتدار کا جھگڑا ہوگا مگر میرا استعماری طاقتوں سے 200سال پہلے سے نظریے کا جھگڑا ہے۔انسانوں کی معاشی ،اقتصادی آزادی قرآن کا منشور ہے۔ جمعیت علماء اسلام اسی منشور کو متعارف کروا رہی ہے۔جے یوآئی کے قیام کا مقصد انسانوں کو انسان کی قید سے نجات دلا نا ہے۔ پنجاب کے عوام اٹھو! اور پنجاب کے وڈیرے ، جاگیردار، خان، چوہدری کو اپنے ووٹ کی طاقت سے شکست دو۔ دینی قوتیں، مساجد ومدارس فورتھ شیڈول کے خوف سے نکل کر جمعیت کا ساتھ دے کر طاقت کے بل بوتے پر آقا بننے والوں کی غلامی سے نکلیں۔ جمعیت علماء اسلام کے مرد اپنی خواتین کی نمائندگی کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں اس لئے ان کے جلسوں میں خواتین نہیں آتیں۔ انہوں نے کہاپنجاب کی سرزمین پرسوسال بعد بھی اپنے بڑوں کی قدر کرنے والے موجود ہیں۔ جے یوآئی سو سال سے اپنا ایک عقیدہ، فکر اور اساس رکھتی ہے۔ جے یو آئی کے قیام کا مقصد انگریز کی غلامی سے انکار اور انسان کو اس کی قید سے آزاد کرانا تھا۔ سترسال بعد ہمیں ایک بار پھر امریکی غلامی میں جھونکا جارہا ہے۔ ہم نے پندرہ سال پہلے اسی موقع پر امریکہ مردہ باد کا نعرہ لگایا تھا۔ گرفتاریاں بھی دیں۔پنجاب کے عوام امریکی غلامی اور پنجاب کے وڈیروں ، جاگیر داروں، چوہدریوں کے خلاف اٹھ کھڑے ہوں جے یوآئی ان کی پشت پر ہوگی۔ پوری دنیا کے حکمران جواب دیں کہ امریکہ نے جس مصلحت کے نام پر دہشت گردی کے خلاف پوری دنیا کو اکٹھا کیا وہی امریکہ آج ہر جگہ آگ لگا رہا ہے۔

پوری دنیا میں دہشت گردی کے خاتمے کے نام پر امریکہ بطور ریاست دہشت گردی کرکے وہاں اسلحہ بیچتا ہے۔ دنیا میں داڑھی، پگڑی، مولوی، مدرسہ، دین کو دہشتگردی سے نتھی کرکے امریکی ایجنڈا پروان چڑھایا جارہا ہے۔ مگر یہ دہشت گرد نہیں۔ دنیا بھر میں جتنے دہشت گرد ہیں وہ امریکی پیداوار ہیں۔ اپنے مقاصد کیلئے انہیں اسلحہ دیتا ہے اور دہشت گردی کرواتا ہے۔ انہوں نے کہا خیبر پختونخوا میں چھچھوڑوں کی حکومت ہے ۔ ن لیگ نے اس وقت نہیں مانی اب بھگت رہی ہے۔ عقل سے عاری شخص مقدمہ عدالت میں زیر سماعت ہونے پر بھی ایک شخص کو مجرم بناکر پانامہ کے نام پر اپنے عزائم کی تکمیل چاہتا ہے۔ قرآن امن اور اقتصادی ترقی کی بات کرتا ہے اور جے یوآئی اس پر کاربند ہے مگر دوسری طرف انتشار کی سیاست کی جارہی ہے۔ اس موقع پرخطاب کرتے ہوئے ڈپٹی چیئرمین سینٹ مولانا عبدالغفور حیدر ی نے کہا کہ آف شور کمپنیاں بنانے والے عدل فاروقی کے نظام سے گھبراہٹ کاشکار ہیں۔ پاکستان میں اسلامی نظام کے نفاذ سے ہی کرپشن کا خاتمہ ممکن ہے۔

اگلے سال پشاور میں پچاس لاکھ لوگوں کو جے یوآئی کا پیغام سنائیں گے۔سابق وزیراعلیٰ صوبہ خیبرپختونخوا محمد اکرم خان درانی نے مفتی محمود کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہم مغرب کی گندی تہذیب والا نیا پاکستان نہیں بلکہ پرانی پاکستان کو اسلامی فلاحی پاکستان بنانے کی جدوجہد جاری رکھیں گے۔عمران خان میڈیا کے بل بوتے پر سیاسی طور پر زندہ ہے۔ اگر مولانا فضل الرحمن قومی قیادت میں نہ ہوتے تو پنجاب کے مردوں کو’کڑا‘ لگ جاتا۔ پنجاب میں جے یوآئی ایک بھی پارلیمانی نشست نہ رکھنے کے باوجود خلاف اسلام قانون ختم کروا سکتی ہے تو جہاں ان کے ایم پی اے وایم این اے ہیں وہاں یقیناًشریعت کا زیادہ تذکرہ ہوتا ہے۔انہوں نے کہا پنجاب میں بھی اب جے یوآئی کا ممبر پارلیمنٹ ہونا چاہئے۔ انہوں نے پی ٹی آئی کے چیئرمین عمران خان کے اس دعوے کی نفی کی کہ خیبر کے پی میں پولیس کا نظام بہت بہتر ہے۔

انہوں نے میڈیا اور عوام کو دعوت دی کہ وہ اس صوبے میں جا کر دیکھیں کہ اس شخص کے قول وفعل میں کتنا تضاد ہے؟ علاوہ ازیں مفتی محمود کانفرنس دھوبی گھاٹ میں سابق صوبائی صدر مولانا رشید احمد لدھیانوی کے صاحبزادے مولانا نعمان لدھیانوی نے تین قراردادیں پیش کیں جو ہزاروں کے مجمع نے پرچم لہرا کر اور دونوں ہاتھ اٹھا کر متفقہ طور پر منظور کرلیں۔ قراردادوں میں مطالبہ کیا گیا کہ جمعیت علماء اسلام ف کا یہ عظیم اجتماع حکومت پنجاب سے مطالبہ کرتا ہے کہ1۔ مدارس دینیہ کو سرچ آپریشن میں کلیئر قرار دینے کے باوجود ہراساں کرنے کا سلسلہ فوری بند کیا جائے۔ جے یوآئی مدارس اور دینی طبقے پر ہرقسم کی قدغن کی مذمت کرتی ہے اور مدارس کے تحفظ پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا۔ 2۔ مدارس العربیہ کے مہتممین حضرات کے خلاف فورتھ شیڈول فوری ختم کیا جائے۔3۔ اپریل 2017کی سات تاریخ سے پشاور میں جے یوآئی کے صد سالہ یوم تاسیس میں فیصل آباد کا یہ تمام مجمع شرکت کرے گا۔ تمام شرکاء نے ان قراردادوں کی مکمل حمایت کا اعلان کیا