بریکنگ نیوز
Home / بزنس / قومی دفاعی بجٹ پر ایک رپورٹ

قومی دفاعی بجٹ پر ایک رپورٹ

اسلام آباد ۔قومی دفاعی بجٹ کے 6مطالبات زر مجموعی طور پر 9 کھرب 28 ارب38 کروڑ سے زائد کی رقم پر مشتمل ہیں۔ آئندہ مالی سال کیلئے بھی دفاعی بجٹ کی اس بار بھی تمام پارلیمانی جماعتوں کی طرف سے متفقہ طور پر منظوری کا قوی امکان ہے‘فوج کے زیر انتظام تعلیمی اداروں کیلئے 5 ارب 31کروڑ 84 لاکھ 85 ہزار روپے کی ڈیمانڈ کی گئی ہے‘ دفاعی بجٹ میں ترقیاتی اخراجات کیلئے 53کروڑ 50 لاکھ روپے رکھے گئے ہیں ‘ دفاعی بجٹ کیلئے 6 مطالبات زر وزیر خزانہ سینیٹر اسحاق ڈار قومی اسمبلی میں پیش کرینگے۔ باضابطہ طور پر ان پر رائے شماری کروائی جائے گی۔ تمام اراکین کی طرف سے قومی دفاعی بجٹ میں اس سال بھی اتفاق رائے سے منظوری متوقع ہے۔

وزارت دفاع کے تمام 6 مطالبات زر کی اس خبر رساں ادارے کو دستیاب دستاویزات کے مطابق شعبہ دفاع کا پہلا مطالبہ زر 1 ارب 56 کروڑ 51 لاکھ 29 ہزار روپے کی رقم پر مشتمل ہے۔ سروے آف پاکستان کے اخراجات کے لئے مطالبہ زر ایک ارب 20 کروڑ 65 لاکھ 18 ہزار روپے کی رقم پر مشتمل ہے۔ اس طرح کینٹ گریژن تعلیمی اداروں کے اخراجات پورے کرنے کے لئے دو مطالبات زر کی منظوری لی جائے گی اور فوجی علاقوں کے تعلیمی اداروں کے لئے آئندہ مالی سال میں 5 ارب 31کروڑ 84 لاکھ 85 ہزار روپے کی ڈیمانڈ کی گئی ہے۔ شعبہ دفاع کے بھی دو مطالبات زر ہیں۔ دوسرے مطالبہ زر 50 کروڑ روپے پر مشتمل ہے۔ اس طرح شعبہ دفاع کے دونوں مطالبات زر 2 ارب 5 کروڑ روپے سے زائد کی رقم پر مشتمل ہے۔ دفاعی خدمات کے اخراجات پورے کرنے کے لئے مطالبہ زر 9 کھرب 20 ارب روپے پر مشتمل ہے۔