بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / خیبر پختونخوا میں محنت کشوں کے تحفظ کیلئے ایکٹ کا مسودہ تیار

خیبر پختونخوا میں محنت کشوں کے تحفظ کیلئے ایکٹ کا مسودہ تیار

پشاور۔خیبر پختونخوا حکومت نے صوبے میں محنت کشوں کے سماجی تحفظ کو یقینی بنانے اور انہیں سہولیات فراہم کرنے کیلئے نئے ایکٹ’’خیبر پختونخوا ایمپلائز سوشل سیکورٹی ایکٹ 2017‘‘کا مسودہ تیار کرلیا ہے۔مذکورہ نئے ایکٹ کے مسودے کی منظوری خیبر پختونخوا ادارہ برائے سماجی تحفظ(ESSI ) کی گورننگ باڈی نے دی ہے جسے جلد محکمہ قانون کو منظوری کیلئے بھیجا جائے گا اور اس کے بعد صوبائی کابینہ میں پیش کیا جائے گا۔

مسودے کی منظوری جمعرات کے روز پشاور میں ادارہ برائے سماجی تحفظ کی گورننگ باڈی کے 73ویں اجلاس میں دی گئی جسکی صدارت صوبائی وزیر محنت انیسہ زیب طاہر خیلی نے کی۔منعقدہ اجلاس میں سیکرٹری محنت اور کمشنر ادارہ برائے سماجی تحفظ خیام حسن،ڈپٹی کمشنر سید اسماعیل شاہ گیلانی،ڈی جی انور خان کے علاوہ گورننگ باڈی کے ممبران نے شرکت ۔

گورننگ باڈی نے ادارہ برائے سماجی تحفظ کے مالی سال 2017-18ء کیلئے مجوزہ 73 کروڑ اور 60 لاکھ روپے بجٹ کی بھی منظوری دی جبکہ ادارہ کیلئے فارما سسٹس اور اسسٹنٹ کے لئے نئی آسامیوں کی تخلیق کو بھی متفقہ طور پر منظور کیا گیا ۔اس موقع پر گورننگ باڈی نے ادارہ میں اعلیٰ تعلیم کے حامل ملازمین کو 2500روپے ایم فل الاؤنس کے اجراء کے سلسلے میں حکومتی مروجہ پالیسی اور اسناد کی ہائیر ایجوکیشن کمیشن کی تصدیق سے مشروط منظوری دی۔