بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / 5ا ضلاع کا ہاؤسنگ سکیموں کیلئے اراضی دینے سے انکار

5ا ضلاع کا ہاؤسنگ سکیموں کیلئے اراضی دینے سے انکار


پشاور۔صوبہ کے پانچ اضلاع نے سرکاری ہاؤسنگ سکیم کے لیے اراضی کی فراہمی سے معذوری کااظہارکردیاہے جبکہ نو اضلاع کی طرف سے تاحال صوبائی حکومت کو کوئی جواب موصول نہیں ہوا دس اضلاع کی طرف سے اراضی کی نشاندہی ہوچکی ہے ایک ضلع نے نشاندہی کے لیے سرکاری افسرکی تعیناتی کامطالبہ کردیا سرکاری دستاویز کے مطابق خیبر پختونخواحکومت نے تمام پچیس اضلاع میں ہاؤسنگ سکیموں کے لیے اراضی کی نشاندہی کے لیے متعلقہ ڈپٹی کمشنروں کو چٹھیاں ارسال کی تھیں تاکہ انکی طرف سے تجویزکی جانے والی اراضی پرسرکاری ہاؤسنگ سکیموں کااجراء کیاجائے۔

اس سلسلے میں کئی ماہ گذرنے کے باوجودملاکنڈ ،کرک،ایبٹ آباد،پشاور،صوابی ،مردان ،دیر پائیں ،دیر بالااور کوہاٹ کے ڈپٹی کمشنروں کی طرف سے کوئی جواب نہیں بھجوایاجاسکاہے جبکہ ڈیر ہ اسماعیل خان ،کوہستان ،شانگلہ ،نوشہرہ اورتورغر کے ڈپٹی کمشنروں نے بتایاہے کہ انکے اضلاع میں سرکاری ہاؤسنگ سکیموں کے لیے کوئی مناسب اراضی موجودنہیں ہے جبکہ ڈی سی مانسہرہ نے مؤقف اختیارکیاہے کہ کسی افسر کو تعینا ت کیا جائے جو ضلع میں موزوں جگہ کی نشاندہی کرے ڈی سی ہری پورنے ساڑھ چھ سو کنال کی اراضی کی نشاندہی کی ہے سوات میں کل 2558کنال ،ٹانک میں 6791کنال ،ہنگو میں 111کنا ل،بونیر میں 300بٹگرام میں1200کنال اراضی کی نشاندہی کی جاچکی ہے جبکہ چارسدہ اور بنوں میں ایک سے زائد مقامات کی نشاندہی کی گئی ہے