بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / عید الاضحی پر بھی الگ الگ عیدیں منانے کا امکان

عید الاضحی پر بھی الگ الگ عیدیں منانے کا امکان

اسلام آباد۔وفاقی حکومت اور وزارت مذہبی امور اپنی بھرپور کوششوں اور مفتی پوپلزئی کو منظر سے ہٹانے کے باوجود ملک میں ایک ہی روز عید الفطر منانے میں کامیاب نہ ہوسکی اور دو عیدوں کی روایت برقرار رہی ،مرکزی رویت ہلال کمیٹی کی جانب سے خیبر پختونخوا کی جانب سے موصول ہونے والی شہادتوں کو تسلیم نہ کئے جانے اور مرکزی کمیٹی کی تشکیل نو نہ ہونے کی وجہ معاملات بہتری کی بجائے مذید خرابی کی سمت جانے لگے ہیں اگر معاملات کو درست نہ کیا گیا تو عید الضحیٰ کے موقع پر بھی الگ الگ عیدیں منانے کا امکان ہے ۔

ذرائع کے مطابق وفاقی حکومت اور وزارت مذہبی امور اپنی بھرپور کوششوں کے باوجود ملک میں ایک ہی روز عید الفطر منانے میں کامیاب نہ ہوسکے اور خیبر پختونخوا کے اکثریت اضلاع میں ایک روز قبل ہی عید منانے کی روایت برقرار رہی ذرائع کے مطابق رمضان المبارک اور عیدین کے موقع پر اختلاف کا سب سے بڑا سبب سمجھے جانے والے مفتی شہاب الدین پوپلزئی کو حکومت نے عید الفطر سے محض تین روز قبل سرکاری سطح پر دبئی بھجوا کر یہ سمجھ لیا تھا کہ اب مسجد قاسم علی خان میں غیر سرکاری رویت ہلال کمیٹی کا اجلاس نہیں ہوسکے گا مگر حکومت کی کوششوں پر اس وقت پانی پھر گیا جب مسجد قاسم علی خان سمیت صوبہ بھر کے دیگر اضلاع میں 24جون کو رویت ہلال کمیٹی کے اجلاسوں کا انعقاد کیا گیا ۔

ذرائع کے مطابق حکومت نے ان اجلاسوں کو روکنے کی ہر سطح پر کوششیں کی مگر کامیاب نہ ہوسکے ذرائع کے مطابق مرکزی رویت ہلال کمیٹی اور مسجد قاسم علی خان کی غیر سرکاری رویت ہلال کمیٹی کے مابین جھگڑوں سے صوبائی حکومت نے اپنے آپ کو مکمل طور پر لاتعلق کر رکھا تھا اور تمام احکامات وفاق کی سطح پر جاری ہوتے تھے تاہم حکومت اور وزارت مذہبی امور اپنی کوششوں میں کامیاب نہ ہوسکی ذرائع کے مطابق اگر وزارت مذہبی امور نے رویت ہلال کمیٹی کے معاملات کو عید الضحیٰ سے قبل ہی درست نہ کیا تو عید الفطر کی طرح عید الضحیٰ بھی الگ الگ طور پر منائے جانے کا امکان ہے ۔