بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / نیب خیبرپختونخواکوسٹیل ملزکی ریکوری سے روک دیاگیا

نیب خیبرپختونخواکوسٹیل ملزکی ریکوری سے روک دیاگیا

پشاور۔ پشاور ہائی کورٹ کے جسٹس محمد ابراہیم خان اور جسٹس محمد ناصر محفوظ پر مشتمل ڈویژن بنچ نے نیب خیبر پختونخوا کو خیبر ایجنسی میں سٹیل مل سے بجلی بلز کی بقایا جات کی وصولی اور مل کے مالک کے خلاف کسی قسم کی کارروائی سے روکتے ہوئے سیکرٹری سیفران ، سیکرٹری پانی و بجلی ، پیپکو، ٹیسکو اور نیب خیبر پختونخوا سے جواب طلب کر لیا ہے۔ فاضل عدالت نے ایڈوکیٹ شمائل احمد بٹ اور حضرت بلال خان کی وساطت سے درخواست گزار محمد عمر کی جانب سے دائر رٹ درخواست کی سماعت کی تو عدالت کو بتایا گیا کہ درخواست گزار کی خیبر ایجنسی میں عمر سٹیل فرنس مل ہے۔

تاہم نیب نے مل کے مالک کو 29 مئی 2017 کو نوٹس جاری کیا ہے جس کے مطابق سٹل مل بجلی بلز ناہند گان ہے اور اس کے ذمہ پیسکو کے آٹھ کروڑ روپے بقایا جات ہے ۔انہوں نے عدالت کو دلائل دئیے کہ وفاقی حکومت نے 14 فروری 2013 کو سیکرٹری سیفران کے ذریعہ فاٹا سیکرٹریٹ کو ایک مراسلہ جاری کیا تھا جس کے تحت نیب کو فاٹا اور بلوچستان میں کارروائی کا اختیار نہیں ہے ، نیب کو ریکوری سے روک دیا ، علاوہ ازیں درخواست گزار نے اس حوالے سے متعلقہ محکمہ نیپرا کو درخواست بھی دائر کی ہوئی ہے۔

، جہاں وہ کیس کے فیصلہ تک ماہانہ بلز اور بقایا جات کی مد میں ماہانہ پانچ لاکھ روپے کی ادائیگی بھی کر رہا ہے لہذا عدالت سے استدعا ہے کہ نیب کے نوٹس کو کالعدم قرا دیا جائے ، جس پر فاضل عدالت نے نیب خیبر پختونخوا کو خیبر ایجنسی میں سٹیل مل سے بجلی بلز کی بقایا جات کی وصولی اور مل کے مالک کے خلاف کسی قسم کی کارروائی سے روکتے ہوئے سیکرٹری سیفران ، سیکرٹری پانی و بجلی ، پیپکو، ٹیسکو اور نیب خیبر پختونخوا سے جواب طلب کر لیا ہے۔