بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / وزیر اعظم سکیم میں خرد بردکے ملزمان پرفرد جرم عائد

وزیر اعظم سکیم میں خرد بردکے ملزمان پرفرد جرم عائد


پشاور۔پشاور کی احتساب عدالت میں سابق ڈپٹی کمشنر مانسہرہ ڈاکٹر امبر علی و ذوالفقار سمیت 36ملزمان کے خلاف قومی اسمبلی کے حلقہ نمبر 21تور غر مانسہرہ کی مختلف یونین کونسلوں میں وزیر اعظم سکیم کے تحت ترقیاتی کاموں میں کروڑوں روپے کے خوردبرد کے الزام میں فرد جرم عائد کر دی ہے تاہم ملزمان نے صحت جرم سے انکار کردیاجس پر فاضل عدالت نے 5ستمبر کو استغاثہ کے گواہان کو عدالت طلب کرلیا ہے نیب خیبر پختونخوا نے ڈاکٹر امبر علی سمیت9ملزمان کو نومبر 2015میں گرفتار کیا تھا جبکہ دیگر گرفتاریاں بعد میں کی گئی ہے۔

ملزمان پر الزام ہے کہ ضلع مانسہرہ کے NA21میں وزیر اعظم کے پیپلز ورکس پروگرام میں مختلف یونین کونسلز میں ڈسٹرکٹ ڈیویلپمنٹ یونٹ کے تحت ترقیاتی کام کئے تھے جس میں انہوں نے سال 2013میں ملی بھگت سے 72اعشاریہ 249ملین روپے غبن کرکے سرکاری خزانے کو نقصان پہنچایا تھا نیب نے ملزمان کے خلاف تحقیقات مکمل کرنے کے بعد ریفرنس احتساب عدالت میں دائر کردیا تھا جس پر گزشتہ روز فاضل عدالت نے ملزمان کے خلاف فرد جرم عائد کر دی ۔

دیگر ملزمان میں سابق ڈپٹی کمشنر مانسہرہ ذوالفقار،محمد بشیر ،عبدالحمید ،شیخ امجد حسین اطہر جلیل،محمد رزاق،خالد محمود ، محمد اسلم رفیق ،دلدار ،انجم خان،آفتاب ،لطیف الرحمان،آصف حسین ،محمد اعجاز ،ساجد حیات ،گل رحیم ،ولی احمد ،محمد صدیق ،شاہ نظر ،مشتاق احمد ،عبدالقدیر ،عبدالمالک ،محمد طاہر جدون ،محمد رازق ،محمد خالد ،مشتاق احمد ولد سردار،انور خان، ہیبت خان،محمد صادق ،شاہد حسین ،سلطان محمد ،عمر آیاز ،محمد حنیف ،امان اللہ،ملک لیاقت اور سید واجد علی شاہ شامل ہیں ان میں سے ملزم انور خا ن تاحال مفرور ہے جبکہ دیگر ملزمان ضمانت پر ہیں یا گرفتار نہیں کئے گئے ۔