بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / پاناما معاملے میں سرخ رو ہوں گے: وزیراعظم

پاناما معاملے میں سرخ رو ہوں گے: وزیراعظم


سیالکوٹ: وزیراعظم نواز شریف کا کہنا ہے کہ شریف خاندان پر ایک روپے کی کرپشن کا الزام نہیں، ہم پاناما پیپرز کیس میں سرخ رو ہوں گے۔

سیالکوٹ میں ایوان صنعت و تجارت کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے نواز شریف کا کہنا تھا کہ ان کی حکومت پر گذشتہ 4 برس میں کرپشن کا ایک بھی الزام نہیں لگا۔

پاناما لیکس کے تناظر میں اپنے خاندان کے مالی اثاثوں کی تحقیقات کے لیے سپریم کورٹ میں جاری کیس کے حوالے سے نواز شریف نے سوال کیا ’آخر کس چیز کا احتساب ہورہا ہے، سمجھ نہیں آتی کہ کرپشن کب ہوئی ہے جس کا احتساب ہورہا ہے‘۔

پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کے بانی اور سابق وزیراعظم ذوالفقار علی بھٹو کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ ‘بھٹو نے ہمارا سارا پیسہ لوٹ لیا پھر بھی ہم ہی سے حساب مانگا جارہا ہے’۔

یہاں وزیراعظم نواز شریف نے 70 کی دہائی میں ذوالفقار علی بھٹو کے دور میں صنعتوں اور نجی اداروں کو قومیانے کی پالیسی کا ذکر کیا۔

اپنی حکومت کی کارکردگی بتاتے ہوئے وزیراعظم نے بتایا کہ جب پاکستان مسلم لیگ (ن) اقتدار میں آئی تو اسٹاک مارکیٹ 19 ہزار پوائنٹس پر موجود تھی، جس نے 54 ہزار پوائنٹس کی سطح کو بھی عبور کیا۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستان میں دہشت گردی کی کمر توڑ دی گئی ہے اور ملک اس وقت کامیابیوں کی راہوں پر گامزن ہے۔

پاکستان میں بجلی بحران کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ ملک سے لوڈشیڈنگ ختم ہوتی دکھائی دے رہی ہے اور آئے دن بجلی کے نئے منصوبوں کا افتتاح ہورہا ہے جبکہ 2018 تک ملک سے لوڈ شیڈنگ کا مکمل خاتمہ ہوجائے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ ملک بھر میں ترقیاتی کام جاری ہیں اور جن علاقوں میں مسلم لیگ (ن) کی حکومت نہیں ہے وہاں بھی ترقیاتی کام کرائے جارہے ہیں۔