بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / سی پیک روٹ کیلئے بورڈ آف انوسٹمنٹ کا اہم اعلان

سی پیک روٹ کیلئے بورڈ آف انوسٹمنٹ کا اہم اعلان


اسلام آباد ۔ بورڈ آف انوسٹمنٹ نے اعلان کیا ہے کہ حکومت نے چائنا پاکستان اقتصادی راہداری(سی پیک) روٹ پر 46اسپیشل اکنامک زون کی تعمیر کا منصوبہ بنایا ہے ۔بیجنگ میں ہونے والے پاکستان چائنا جوائنٹ کارپوریشن کمیٹی (پی سی جے سی سی )کے اجلاس میں بتایا گیا کہ منصوبے کے تحت مجوزہ46اسپیشل اکنامک زون میں سے نو کو پہلے ہی ترجیحات میں شامل کرلیا گیا ہے جبکہ چینی کمپنیاں بھی انفراسٹریکچر،توانائی اور ریلوے سے متعلق متعدد منصوبوں پر کام کررہی ہیں۔آل پاکستان بزنس فورم کے صدر ابراہیم قریشی کا اس حوالے سے کہنا ہے کہ ان اسپیشل اکنامک زون میں تیار ہونے والی مصنوعات نہ صرف بر آمد کی جاسکیں گی ۔

بلکہ مقامی مارکیٹ میں بھی ڈیوٹی فری کے طور پر فروخت کی جاسکیں گی،ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کی 20کروڑ کی آبادی کے تناظر میں یہ اسپیشل اکنامک زون سرمایہ کاروں کیلئے انتہائی آئیڈیل ہیں جبکہ چینی کمپنیاں بھی ان اسپیشل اکنامک زون سے استفادہ کرسکیں گی ۔ابراہیم قریشی کا مزید کہنا تھا کہ اپنے محل وقوع،ہنر مند افرادی قوت کی فراہمی ،خام مال کی دستیابی اور ملک کے اندر اور باہر لنکیج کے باعث ہر اسپیشل اکنامک زون اپنی اہمیت کے باعث سرمایہ کاروں کیلئے خاص فائدے کے حامل ہونگے،چین کو اسپیشل اکنامک زون کی تیاری میں خصوصی مہارت حاصل ہے اور پاکستان اس سلسلے میں چینی تجربے سے استفادہ کرسکتا ہے ۔

سی پیک منصوبے میں اسپیشل اکنامک زون کی تعمیر کے جائزے کے حوالے سے منعقدہ ایک اجلا س کی صدارت کرتے ہوئے وفاقی وزیر منصوبہ بندی و ترقیات احسن اقبال کا کہنا تھا کہ تمام صوبوں کو اسپیشل اکنامک زون کی موثر تشہیر اور سرمایہ کاروں کیلئے انہیں پرکشش بنانے کے حوالے سے جلد پریزینٹیشن تیا رکرلینی چاہئیں،ان کا مزید کہنا تھا کہ سی پیک منصوبے سے مقامی صنعتوں کو کوئی نقصان نہیں ہوگا بلکہ مقامی بزنس کمیونٹی کے مفاد کا تحفظ ہوگا ،اجلاس میں شریک چاروں صوبوں کے نمائندگان نے اسپیشل اکنامک زون کے حوالے سے اپنی اپنی سفارشات اور تجاویز بھی پیش کیں،ان اسپیشل اکنامک زونز میں بجلی اور گیس کی فراہمی کی ذمہ داری وفاقی حکومت کی ہوگی ۔