بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / 47 رکنی وفاقی کابینہ نے عہدوں کا حلف اٹھالیا

47 رکنی وفاقی کابینہ نے عہدوں کا حلف اٹھالیا

 اسلام آباد: ایوان صدرمیں نئی وفاقی کابینہ کی تقریب حلف برداری منعقد ہوئی جس میں صدرمملکت ممنون حسین نے 47 رکنی وفاقی کابینہ سے عہدوں کا حلف لیا۔ ایوان صدرمیں 47 رکنی وفاقی کابینہ نے عہدوں کا حلف اٹھالیا۔ صدرمملکت ممنون حسین نے وفاقی کابینہ کے نئے ارکان سے حلف لیا۔

وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی کابینہ کےارکان کی تعداد 47 ہے جس میں اسحاق ڈار، خواجہ آصف، احسن اقبال، سعدرفیق، عبدالقادر بلوچ وفاقی وزیرمقررہوگئے۔ وفاقی وزرا میں خرم دستگیر، راناتنویر، اکرم درانی، سکندرحیات بوسن، پیرصدرالدین، شیخ آفتاب ، کامران مائیکل، مرتضیٰ جتوئی، ریاض پیرزادہ، برجیس طاہر، زاہد حامد، حاصل بزنجو، سرداریوسف جب کہ مریم اورنگزیب، انوشہ رحمان، جام کمال، امین الحسنات وزرائے مملکت مقررکیے گئے ہیں۔

عابدشیرعلی انچارچ وزیرمملکت، عثمان ابراہیم، جعفراقبال وزیرمملکت مقرراحسن اقبال وزیرداخلہ، خواجہ آصف وزیرخارجہ مقرر ہوگئے۔ وزیرخزانہ اسحاق ڈار، خرم دستگیر وزیردفاع ، مشاہداللہ وفاقی وزیرکلائمیٹ چینج جب کہ پچھلی حکومت کے 2 وزرائے مملکت کووفاقی وزیربنادیا گیا۔ سائرہ افضل تارڑوفاقی وزیرصحت، بلیغ الرحمان وفاقی وزیرتعلیم مقررہوگئے۔ وزارت پانی وبجلی کوتوڑدیا گیا، پٹرولیم اورپاورکوملا کرنئی وزارت توانائی بنادی گئی جس کے انچارج وزیرعابدشیرمقررکردیئے گئے۔ سید جاوید علی شاہ آبی ذرائع کے وزیر، طلال چودھری وزیرمملکت داخلہ، مریم اورنگزیب انچارج وزیرمملکت برائے اطلاعات مقررہوگئیں۔

پرویزملک وزیرتجارت، طارق فضل چودھری وزیرکیڈ، محسن شاہ نوازرانجھا، عبدالرحمان کانج، دانیال عزیزوزیربرائے امور کشمیر، جنیدانورچودھری وزیرمملکت جب کہ عثمان ابراہیم وزیرمملکت برائے قانون مقررہوگئے۔

ڈاکٹردرشن لعل وزیرمملکت برائے بین الصوبائی رابطہ اورفاٹا سےاکرام خان وزیرمملکت برائےسیفران ہوں گے۔ جنوبی پنجاب کے وزرا میں اویس لغاری، ارشد لغاری، حافظ عبدالکریم، عبدالرحمان کانجو، جاویدشاہ شامل ہیں جہاں  اویس لغاری سائنس وٹیکنالوجی کے وزیر جب کہ پلاننگ ڈویژن وزیراعظم شاہدخاقان عباسی کےماتحت رہے گا۔

نوازشریف کی کابینہ میں 20 وفاقی وزرااور9 وزیرمملکت تھے، سینیٹرصلاح الدین ترمزی اینٹی نارکوٹکس کے وفاقی وزیر ہوں گے، ٹیکسٹائل کی الگ وزارت ختم کرکے تجارت کےساتھ منسلک کردیاگیا، پوسٹل سروسزکومواصلات سے الگ کرکےعلیحدہ وزارت بنا دیا گیا جب کہ  وزارت پانی وبجلی کوبھی 2 حصوں میں تقسیم کردیا گیا۔ جنوبی پنجاب سے کل 8 وزیرہوں گے 5 نئے وزیربنائےگئے جب کہ 3 پرانے وزیرنے بھی دوبارہ حلف اٹھالیا۔