بریکنگ نیوز
Home / انٹرنیشنل / امریکا میں گال پر بوسہ لینے سے 18 دن کی بچی انتقال کرگئی

امریکا میں گال پر بوسہ لینے سے 18 دن کی بچی انتقال کرگئی


واشنگٹن: امریکا میں محبت کے اظہار کے لیے گال پر بوسہ لینے کی وجہ سے 18 دن کے بچے کی موت نے دنیا بھر میں والدین کو خوفزدہ کردیا ہے۔

عام طور پر بچے کی پیدائش کے وقت عزیز و اقارب اور دوست احباب مبارکباد دینے اور بچے سے ملنے کے لیے گھروں پر آتے ہیں اور بچے کو پیار بھی کرتے ہیں اور چومتے بھی ہیں۔ ایسا ہی کچھ امریکی ریاست آئیوا کے جوڑے نکول اور شین سیفرٹ کے ساتھ ہوا جب ان کی 18 دن کی بچی ماریانا سیفرٹ گال پر بوسہ لینے سے اُس وقت چل بسی جب اس کے جسم میں خطرناک وائرس ’’اوروفیشل ہرپز‘‘ داخل ہوا اوراس کی وجہ سے بچی کو گردن توڑ بخار ہوگیا اوردیکھتے ہی دیکھتے وہ زندگی کی بازی ہار گئی۔

ڈاکٹرز نے بچی کی موت کے بعد جب نکول اور شین کے ٹیسٹ کیے تو معلوم ہوا کہ ان دونوں میں ایسا کوئی وائرس موجود نہیں جس کا مطلب یہ ہوا کہ بچی کو وائرس ان کے کسی رشتے دار یا دوست سے لگا جسے زکام تھا۔ ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ عام طور پر یہ وائرس جان لیوا نہیں ہوتا تاہم اتنے چھوٹے بچے کے لیے یہ نقصان دہ ضرور ہوسکتا ہے کیوں کہ اس کی قوت مدافعت کمزور ہوتی ہے۔ شین اور نکول نے دیگر والدین سے اپیل کی ہے کہ وہ اپنے نوزائیدہ بچے کو کسی دوسرے شخص کے حوالے نہ کریں اور انہیں بوسہ بھی نہ لینے دیں۔