بریکنگ نیوز
Home / انٹرنیشنل / ن لیگ قیادت نے لندن میں سر جوڑ لیا

ن لیگ قیادت نے لندن میں سر جوڑ لیا

لندن۔وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی جگہ وزیراعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف کو مستقل وزیراعظم بنانے کی تجویز پر ایک مرتبہ پھر سے غور شروع کردیا گیا اس معاملے پر وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی لندن میں سابق وزیراعظم نوازشریف سے ہونے والی ملاقات میں بات چیت کی گئی ۔شہباز شریف کو مستقل وزیراعظم بنانے کی تجویز دوبارہ اس لیے زیر غور لائی گئی ہے تاکہ مسلم لیگ (ن) کے اندر دھڑے بندی کا خاتمہ کیا جاسکے ۔سینیٹ سے پولٹیکل پارٹیز ایکٹ 2002میں ترمیم کے بعد نوازشریف کو مسلم لیگ (ن) کا دوربارہ صدر منتخب کیاجائے گا ۔

اس ضمن میں ایک نجی ٹی و ی چینل نے لند ن میں اپنے نمائندے کی رپورٹ میں دعویٰ کیا ہے کہ شہبازشریف کو مستقل وزیراعظم بنانے کا معاملہ ایک بار پھر زیر غور آیا ہے اور اصولی فیصلہ کرلیا گیا ہے اسی لیے شہباز شریف کو ہنگامی طور پر برطانیہ میں نوازشریف نے بلایا ہے جو چند گھٹنوں بعد پہنچ جائیں گے ۔نجی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق شہبازشریف کو مستقل وزیراعظم بنانے کا فیصلہ اس لیے کیا جارہا ہے تاکہ پارٹی کے اندر سے دھڑے بندی ختم کی جاسکے اور مسلم لیگ (ن) کو جن مسائل کا سامنا ہے وہ ختم ہوسکے ۔

ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ پارلیمنٹ سے قانون کی منظوری کے بعد نوازشریف کو ہی پارٹی کا صدر دوبارہ منتخب کیا جائے گا۔شہباز شریف لندن میں (آ ج ) اتوار کو اہم ملاقات کریں گے جس میں اہم فیصلے متوقع ہیں ۔شہبازشریف اس ملاقات میں سابق وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان کے تحفظات سے بھی نوازشریف کو آگاہ کریں گے جبکہ بعض اہم شخصیات سے پس پردہ ہونے والے رابطوں پر بھی نوازشریف کو اعتماد میں لیں گے ۔