بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / سی سی آئی اجلاس کیلئے خیبر پختونخوا حکو مت کا مقدمہ تیار

سی سی آئی اجلاس کیلئے خیبر پختونخوا حکو مت کا مقدمہ تیار

پشاور۔وفاقی حکو مت نے 9 اکتوبر کو مشتر کہ مفادات کونسل کا اجلاس اسلام آباد میں طلب کر لیا ہے وفاقی وزیر برائے بین الصوبائی رابطہ اجلاس کی صدارت کر یں گے ٗاجلاس میں بجلی کے خالص منافع کی مد میں خیبر پختونخوا حکو مت کے بقایاجات ٗصو بے میں لوڈ شیڈنگ کے دورانیہ ٗقدرتی گیس کے استعمال ٗ پیسکو کی جانب سے صو بائی محکموں کے ذمے بجلی کے بقایا جات کی از خود کٹوتی کے معاملات بھی زیر بحث آئیں گی ۔

محکمہ برائے بین الصوبائی رابطہ کے ذرائع کے مطابق خیبر پختونخوا حکو مت نے اجلاس کے لئے صو بے کے ساتھ ہونے والی ناانصافی کے حوالے سے کیس تیار کر لیا ہے جس میں مؤقف اختیار کیا گیا ہے کہ بجلی کے خالص منافع کی مد میں وفاق کے ذمہ 33 ارب روپے بقایا ہیں جبکہ گزشتہ مالی سال کے دوران وفاق نے 18 میں سے 13 ارب روپے کی ادائیگی کی ہے ٗ جبکہ رواں مالی سال کے دوران کوئی رقم ادا نہیں کی گئی ۔

ہمارا صوبہ قیمتی قدرتی وسائل سے مالا مال ہے اور تقریباً 52 فیصد تیل کی پیداوار ملک میں ہمارا صوبہ پیدا کررہا ہے لیکن تیل وگیس میں مرکز ہماری رائیلٹی کاحق نہیں دیتا این ایف سی ایوارڈ کو یقینی بنانے کے لئے اس کے اجلاسوں کا جلد انعقاد صوبائی حکومت کااہم مطالبہ ہے جس کے لئے دیگر صوبوں کامشترکہ اجلاس بھی اسلام آباد میں گزشتہ دنوں طلب کیاگیا اوراس میں متفقہ اعلامیہ جاری کیاگیاقابل تقسیم محاصل میں وفاق نے42.5 فیصدحصہ اپنے پاس رکھا ہے اور57 فیصد حصہ تمام صوبوں کو دیتا ہے جبکہ اس میں بھی 7 فیصد فنڈ علیحدہ طورپر گلگت بلتستان، فاٹا اور آزاد جموں وکشمیر کے لئے وہ اپنے پاس رکھنا چاہتاہے۔