بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / موٹر وہیکل لائسنس کے اختیارات ڈی پی او کے حوالے

موٹر وہیکل لائسنس کے اختیارات ڈی پی او کے حوالے


پشاور۔مغربی پاکستان موٹروہیکلزآرڈیننس 1965کی شق43کے تحت اختیارات کو بروئے کار لاتے ہوئے حکومت خیبر پختونخوا نے مندرجہ ذیل ترمیم تجویز کی ہے جس میں تجویز کیا گیا ہے کہ مغربی پاکستان موٹر وہیکلز رولز 1969میں مجوزہ ترمیم کوشائع کیا جائے جیسا کہ مذکورہ آرڈیننس کی شق 119کے تحت ضروری تقاضا ہے تاکہ اس سے متاثر ہونے والے افراد کی معلومات کے لئے نوٹس دیا جائے کہ اگر کسی کو مجوزہ ترمیم پر کوئی اعتراض ہو یا اس ضمن میں کوئی تجویز ہو تو اسے سیکرٹری محکمہ ٹرانسپورٹ اینڈ ماس ٹرانزٹ ڈیپارٹمنٹ کو اس اعلامیے کی سرکاری گزٹ میں اشاعت کی تاریخ سے 10دنوں کے اندر موصول ہو جانا چاہیے تاکہ مذکورہ مدت کے خاتمے کے بعد اس پر غور کیا جا سکے۔

ترامیم کے مطابق رول 5کے لئے مندرجہ ذیل ترمیم کی جائے گی ۔لائسنسنگ اتھارٹی کئی گاڑیوں کے ڈرائیونگ لائسنسز عطا کرنے کے لئے لائسنسنگ اتھارٹی درج ذیل ہوگی۔کمرشل مقاصد کے لئے ہیوی ٹرانسپورٹ گاڑیوں،لائٹ ٹرانسپوٹ گاڑیوں،پبلک سروس گاڑیوں اور تمام موٹر وہیکلز کے استعمال کے لئے لائسنسنگ اتھارٹی ڈائریکٹر ٹرانسپورٹ یا دیگر کوئی افسر جسے ذمہ دار تفویض کیا جائے اور موٹر کار ؍جیپ؍موٹر سائیکل اور بے ضابطہ ریڑھے؍چھکڑے وغیرہ کے لئے متعلقہ ضلع کے ڈسٹرکٹ پولیس افسر جبکہ ضلع پشاور کی صورت میں سپرنٹنڈنٹ آف پولیس اس سلسلے میں لائسنسنگ اتھارٹی ہوں گے۔

دونوں محکمے اپنی متعلقہ حدود میں انٹر نیشنل ڈرائیونگ لائسنس بھی جاری کریں گے۔ رول19میں ذیلی رول(4) کے لئے مندرجہ ذیل نامی ترمیم کی جائے گی۔ایک لرنر ڈرائیونگ لائسنس45دنوں کیلئے موثر ہوگا جس کی فیس کی ادائیگی پر مزید45دنوں کے لئے تجدید کی جائے گی جیسا کہ حکومت کی جانب سے وقتاً فوقتاً اعلان کیا جائے گا۔ اس امر کا اعلان ٹرانسپورٹ اینڈماس ٹرانزٹ ڈیپارٹمنٹ حکومت خیبر پختونخوا کی جانب سے کیا گیا۔