بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / امریکہ اور بھارت کے مقاصد ایک ہیں ، مولانا فضل الرحمن

امریکہ اور بھارت کے مقاصد ایک ہیں ، مولانا فضل الرحمن


اسلام آباد۔جمیعت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمن نے کہاہے کہ بھارت سوچ سمجھ کر تعلقات میں کشیدگی پیدا کر رہا ہے جنوبی ایشیاء میں امریکہ اور بھارت کے مقاصد ایک ہو گئے ہیں، نئی صدی میں امریکہ دنیا کی جغرافیائی تقسیم اپنی مفاد کے تحت کرنا چاہتا ہے جغرافیائی لکیریں سیاہی سے نہیں خون سے کھینچی جاتی ہیں،امریکہ مسلم ملک میں عدم استحکام پیدا کر رہا ہے افغانستان، عراق، شام،یمن کے بعد خطرات سعودی عرب پر منڈلا رہے ہیں۔

پاکستان کو داخلی عدم استحکام کے ذریعے ایسی صورتحال کا شکار کیا جائے گا،سی پیک کی وجہ سے امریکہ پاکستان کی سلامتی کو سبوتاژ کررہا ہے،امریکہ نے ہمیں ڈرون حملوں اور امداد بند کرنے کی دھمکیاں جبکہ بھارت کو ڈرو ن اور امداددینے کااعلان کیا،غلط پالیسی کی وجہ سے ہمارے ایٹمی پروگرام پر دباؤ بڑھ رہا ہے اور بھارت کے ساتھ سول نیو کلیئر معاہدے کے لیے جا رہے ہیں،بھارت نے مسئلہ کشمیر پر بھونڈے انداز میں مذاکرات کی بات کی جیسے ہمیں خیرات دینا چاہتا ہے۔

سیاسی جماعتوں نے موقف نرم نہ کیاتو خدا نہ کرے ۔2018ء کے انتخابات کامنظر ہم نہیں دیکھ سکھیں گے ،کشمیر کمیٹی ریاست سے الگ نہیں جہاں ریاست وہاں کشمیر کمیٹی کھڑی ہو گی کمیٹی پارلیمنٹ سے کی رہنمائی لیتی ہے،ختم نبوت میں ترمیم کرنے والے جیب کترے کا پتہ چلنا چاہیے۔ان خیالات کااظہار جمعیت علماء اسلام(ف) کے سربراہ مولانافضل الرحمن نے نیشنل پریس کلب میں میٹ دی پریس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

نیشنل پری کلب کے صدر شکیل انجم نے ان کو خوش آمدید کہا۔جمیعت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمن نے کہا کہ عالم اسلام آزمائش اور کرب کے دور سے گزر رہا ہے بھارت اور افغانستان کے ساتھ پاکستان کے تعلقات اور خطے کے ممالک کو درپیش صورتحال قوم،رہنماؤں اور مقتدر اداروں کے لیے لمحہ فکریہ ہے اور بد قسمتی سے ہم پاکستان کے اندر داخلی یکجہتی سے بھی محروم ہو گئے ہیں۔