بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / نوجوانوں کا مستقبل تحریک انصاف سے وابستہ ہے ٗ پرویز خٹک

نوجوانوں کا مستقبل تحریک انصاف سے وابستہ ہے ٗ پرویز خٹک


وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا پرویز خٹک نے کہا ہے کہ تحریک انصاف روایتی سیاسی جماعتوں کے برعکس عام آدمی کی فلاح کیلئے کھڑی ہے۔حالات جیسے بھی ہوں امیر کو کوئی فرق نہیں پڑتا، مسئلہ غریب کا ہے جس کو بدقسمتی سے مفاد پرست سیاستدانوں نے ہمیشہ نظر انداز کیا۔ پاکستان میں جو بھی لیڈر وزیراعظم یا وزیراعلیٰ آیا اُس نے لوٹ مار اور پیدا گیری کی حد کردی ۔تعجب کی بات یہ ہے کہ یہ لوگ لوٹ مار کو جرم ہی نہیں سمجھتے یہی وجہ ہے کہ نااہل نواز شریف کو ابھی تک سمجھ نہیں آئی کہ اُسے کیوں نکالا۔

وہ عوام کو بے وقوف بنانے کی ناکام کوشش کرر ہا ہے اتنا شعور عوام کو بھی ہے کہ سپریم کورٹ کسی کو بلا وجہ نہیں نکالتی ۔حکمرانوں کی لوٹ مار کی وجہ سے دُنیا بھر میں پاکستان کی بدنامی ہوئی۔نواز شریف ، زرداری، حیدر ہوتی ، اسفندیار نے جائیدادیں کہاں سے بنائیں۔ انہیں کبھی بھی عوام کی فکر نہیں ہوئی یہ اپنی ڈاکہ زنی اور قبضہ گیری میں مصروف رہے۔حیرت ہے کہ یہ لوگ بھی عمران خان کا مقابلہ کرنے نکلے ہیں۔

ان میں اورعمران خان میں بڑا فرق ہے ۔ عمران خان باہر سے پیسہ کما کر ملک میں لائے اور غریب کی فلاح کیلئے خرچ کیا جبکہ یہ لوگ ملک سے عوام کا پیسہ لوٹ کر غیر قانونی طریقے سے باہر لے گئے اور وہاں جائیدادیں بنائیں۔ تحریک انصاف اور دیگر جماعتوں کا مقابلہ بنتا ہی نہیں اُنہوں نے این اے فور میں مقابلے کا حشر دیکھ ہی لیا ہے ۔مستقبل پی ٹی آئی کا ہے کیونکہ نوجوانوں کا مستقبل پی ٹی آئی سے وابستہ ہے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے حلقہ پی کے 15 کے علاقے علی آباد اسماعیل خیل ، پی کے 13 کے علاقے زیار ت کا کا صاحب اور پی کے 16 کے علاقے وزیر آباد اوچ خوڑ میاں عیسیٰ ضلع نوشہرہ میں شمولیتی جلسوں سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ جلسوں سے ایم این اے ڈاکٹر عمران خٹک،صوبائی وزیر میاں جمشید الدین کاکا خیل، ضلع ناظم لیاقت خٹک، پی ٹی آئی کے مقامی رہنماوں گل ریز خان ریاض علی، ضلعی جنرل سیکرٹری ملک ابرار ،ا مجد اعظم عرف قائد اعظم ،ضلعی سیکرٹری اطلاعات حیات علی خان اعوان ، سید فرید اللہ شاہ ، تحصیل جہانگیرہ کے نائب ناظم حمید اللہ خان نے بھی خطاب کیا ۔

اس موقع پر سماعیل خیل میں معروف سیاسی شخصیت سردراز خان خٹک، ایاز خان، حیات محمد، زر محمد خان، یار محمد گل عمر خان،انجینئر ارشد خان، سمندر خان، چنار گل خان نے اپنے خاندان اور ساتھیوں سمیت عوامی نیشنل پارٹی سے مستعفی ہو کر تحریک انصاف میں شمولیت کا اعلان کیا جبکہ وزیر آباد اوچ خوڑ میں علاقے کی معروف شخصیت حاجی کامدار خان سمیت ناصر خان، انور علی، لطیف خان، موسیٰ خان شنواری، حاجی گل زادہ ، اسماعیل، تجمل، ادریس ، عرفان، بلال، عباس، آیاز، خالد خان اور دیگر نے اے این پی سے تحریک انصاف میں شمولیت اختیار کی۔مہتمم جامع اسلامیہ دارلعلوم قاری فیض الرحمن، ناظم جامع شفیق الرحمن اور قاری نوراﷲ جان بھی موجود تھے۔

اسی طرح زیارت کا کا صاحب میں ظفر خٹک ،نیک باچا، فرحان عالم، عظیم خان، وحید گل،زوہیب اﷲ، وارث خان، زاہد خان، زرولی خان، میاں قاصد خان، میاں جلال اور دیگر نے تحریک انصاف میں شمولیت کا اعلان کیا۔وزیراعلیٰ نے پارٹی میں نئے شامل ہونے والوں کا خیر مقدم کیا اور اسے پی ٹی آئی کی قیادت پر بھر پور اعتماد کا مظہر قرار دیا۔ انہوں نے کہاکہ وفاق ہمارے صوبے کو اپنا حق دے ورنہ ہمیں اپنا حق لینے کا طریقہ آتا ہے۔

وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے 10 دسمبرتک خیبرپختونخوا کے واجبات دینے کی گارنٹی دی ہے لیکن بعض قوتیں خیبرپختونخوا کو حقوق دینے میں لیت و لعل سے کام لے رہی ہے اوربیورو کریسی کاسرخ فیتہ بھی آڑے آرہاہے ہم ایسے عناصر کو ہر گزمعاف نہیں کریں گے جو ہمیں ہمارا حق دینے میں روڑے اٹکا رہے ہی انھوں نے کہا کہ ہم نے بجلی کے خالص منافع کی سالانہ آمدن چھ ارب سے بڑھا کربیس ارب کردی ہے اور آئندہ اس میں مزید اضافہ ہوگا۔صوبے کی تاریخ میں ہمیشہ ایسا ہوتا آیا ہے کہ حکومت کے آخری سال میں برسراقتدار پارٹی سے لوگ نکل کر دوسری پارٹیوں میں جاتے ہیں مگر تحریک انصاف نے اس روایت کو بدل دیا ہے۔

صوبہ بھر حتی ٰ کہ دوردراز اضلاع سے بھی لوگ پی ٹی آئی میں شامل ہورہے ہیں وجہ صرف ایک ہے کہ پی ٹی آئی واحد سیاسی جماعت ہے جس نے اپنے منشور پر عمل درآمد کیا۔ تحریک انصاف کا مقابلہ کوئی سیاسی جماعت بھی نہیں کر سکتی ۔عمران خان کو کوئی ذاتی لالچ نہیں ہے اور نہ ہی اسے ذاتی کارخانوں کا شوق ہے وہ غریب کیلئے نکلا ہے اُسے قوم کی فکر ہے وہ پاکستان کو فعال اور ترقیافتہ ممالک کی صف میں کھڑا کرنا چاہتا ہے۔وزیراعلیٰ نے کہاکہ کرپشن اور ظلم کا خاتمہ کئے بغیر ترقی ممکن نہیں اس مقصد کیلئے مخلص قیادت کی ضرورت ہے ۔ اگر پاکستان کے سیاسی لوگ سدھر جائیں تو یہ ایک بہترین ملک بن سکتا ہے۔