بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / سانحہ اے پی ایس،آرمی پبلک اسکول پشاور میں مر کزی تقریب کا انعقاد

سانحہ اے پی ایس،آرمی پبلک اسکول پشاور میں مر کزی تقریب کا انعقاد

پشاور۔ پشاور میں آرمی پبلک اسکول (اے پی ایس) پر دہشت گردوں کے حملے کو 2 برس بیت گئے، اس حوالے سے مرکزی تقریب پشاور میں منعقد کی گئی، جس میں چیف آف آرمی اسٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ بھی شریک ہوئے۔تفصیلا ت کے مطابق 16 دسمبر 2014 کو آرمی پبلک اسکول پر کالعدم تحریک طالبان پاکستان (ٹی ٹی پی) کے دہشت گردوں نے حملہ کرکے 140 سے زائد افراد کو موت کے گھاٹ اتار دیا تھا، جن میں زیادہ تعداد معصوم بچوں کی تھی۔اے پی ایس سانحے میں جان قربان کرنے والے بچوں اور اساتذہ کی یاد میں دوسری برسی کی مرکزی تقریب آرمی پبلک اسکول پشاور میں منعقد ہوئی۔

تقریب کا آغاز اے پی ایس کے بہادر بچوں نے تلاوت قرآن پاک سے کیا جس کے بعد اسکول پرنسپل نے مہمان خصوصی جنرل قمر جاوید کویادگار شہدا پر پھول چڑھانے کی دعوت دی۔پاک فوج کے سپہ سالار جنرل جاوید قمر باجوہ نے یادگار شہدا پر سلامی دی، پھول چڑھائے اور شہداء کی بلندی درجات کے لیے ہونے والی دعا کا حصہ بنے۔تقریب کا آغاز طلبہ نے تلاوتِ قرآن پاک سے کیا گیا،پرنسپل آرمی پبلک اسکول نے تقریب کے آغاز میں 2014 میں شہید ہونے والے طلبہ سمیت 140 سے زائد افراد کو خراجِ عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا کہ ‘مسز طاہرہ قاضی، اساتذہ اور بچوں کی شہادت نے قوم کو مضبوط اور متحد کردیا، ہم عہد کرتے ہیں کہ انہیں ہمیشہ یاد رکھیں گے اور ان کی شہادت کو اپنے لیے بہادری اور عظمت کا نشان بنا کر رکھیں گے’۔

تقریب میں شہداء کے والدین اور اہل خانہ کی بڑی تعداد موجود تھی۔گورنر کے پی کے ، کمانڈر پشاور ، سیاسی و عسکری قیادت و دیگر حکام بھی موجود تھے۔ اس موقع پر کئی رقت آمیز مناظر دیکھنے میں آئے۔ سانحے میں شہید ہونے والے بچوں کی مائیں اور لواحقین کی آنکھیں شدت غم سے بھر آئیں ۔ دوسری جانب وزیراعظم نواز شریف نے سانحہ اے پی ایس کی دوسری برسی پر متاثرہ خاندانوں سے اظہار ہمدردی کرتے ہوئے کہا کہ ‘پوری قوم دکھ کے اس لمحے میں متاثرہ خاندانوں کے ساتھ کھڑی ہے اور ہم آج کے دن کے دکھ کو کبھی نہیں بھول سکتے’۔

‘بقاء کی جنگ میں بے مثال قربانیاں دیں‘وزیراعظم نے مزید کہا کہ’ہم نے دہشت گردی کے مکمل خاتمے کے لیے پوری قوت استعمال کرنے کا فیصلہ کیا اور چھوٹے فرشتوں کو شہید کرنے والوں پر رحم نہیں کیا جائے گا’۔ان کا کہنا تھا کہ ‘دنیا نے دیکھا ہم نے دہشت گردوں کے نیٹ ورک کو تباہ کردیا اور دہشت گردوں کی کمر توڑ کر رکھ دی ہے’۔وزیراعظم نے قوم کو یقین دلاتے ہوئے کہا کہ ‘بقاء کی اس جنگ میں ہم نے بے مثال قربانیاں دی ہیں، دہشت گردوں کے خلاف جاری اس جنگ کو منطقی انجام تک پہنچا کر چھوڑا جائے گا اور آئندہ نسلوں کے لیے پرامن اور مستحکم پاکستان یقینی بنائیں گے’۔