551

پاکستان بیت المال کا خیبر پختونخوا کی جامعات سے معاہدہ

پشاور۔پاکستان بیت المال کایونیورسٹی آف ملاکنڈ،یونیورسٹی آف بونیر اوریونیورسٹی آف سوات کیساتھ بالترتیب پچاس پچاس نادار اور مستحق طلبہ کی گریجویشن و ماسٹر کیلئے مفاہمتی یاداشت پر دستخط ہوگئے، اس ضمن میں یونیورسٹی آف ملاکنڈ،یونیورسٹی آف بونیر اوریونیورسٹی آف سوات میں تقاریب کا انعقاد کیا گیا۔طلباء وطالبات سے خطاب کرتے ہوئے پاکستان بیت المال کے منیجنگ ڈائریکٹرعون عباس نے کہاکہ وزیراعظم عمران خان آئندہ الیکشن کیلئے نہیں آئندہ نسل اس کی خوشحالی،فلاح وبہبوداورملک کی ترقی کیلئے سوچ رہے ہیں اوراسی وژن پروہ اپنی توانائی صرف کررہے ہیں۔انہوں نے کہاکہ 9ماہ کے قلیل عرصے میں پاکستان بیت المال نے 4ہزار طلباء وطالبات کوسکالرشپ فراہم کی ہے اوراس ضمن میں ملک کے82یونیورسٹیوں کوپاکستان بیت المال کی جانب سے خودخطوط ارسال کئے گئے ہیں کہ اگرمستحق اورنادارطلبہ کیلئے سکالر شپ چاہئے توپاکستان بیت المال سے رابطہ کیاجائے جوملک کی تاریخ میں پہلی مرتبہ کسی حکومتی ادارے نے ایسااقدام اٹھایاہے۔

 انہوں نے کہاکہ پاکستان بیت المال 150سکول،40سویٹ ہومز اور150وویمن امپاؤرمنٹ سنٹرچلارہاہے جس سے مستحق اورغرباء مستفیدہورہے ہیں جبکہ50ہزارمعذورافرادکوانکے استعمال کی مختلف اشیاء بھی پاکستان بیت المال کی جانب سے فراہم کی جارہی ہیں،موجودہ وفاقی حکومت نے پاکستان بیت المال میں بہترین اصلاحات کی ہیں جوحقیقی معنوں میں مستحق، نادار اورغرباء کی خدمت کررہاہے۔منیجنگ ڈائریکٹرپاکستان بیت المال نے کہاکہ جوانی سے لیڈربننے تک سفرآسان نہیں ہوتا،عمران خان نے کبھی دماغ سے سیاست نہیں کی بلکہ دل سے ایک وژن کی تکمیل کیلئے دن رات کی تھی۔

عمران خان کی تبدیلی کانعرہ وزیراعظم ہاؤس میں بیٹھنے اورزرداری یا نوازشریف کواحتساب کے کٹہرے میں کھڑاکرنے کیلئے نہیں تھابلکہ قوم میں ایک نیا سوچ پیداکرنے کیلئے یہ نعرہ لگایاگیاتھا۔ انہوں نے کہاکہ قائدملت محمدعلی جناحؒ اورعلامہ اقبالؒ کے خواب عملی جامہ انشاء اللہ عمران خان ہی پہنائیں گے جس کیلئے وہ دن رات محنت کررہے ہیں، عمران خان نے محض اقتدار کے حصول،پیسے یاطاقت کیلئے نہیں بلکہ عوام کی فلاح وبہبود،خوشحالی اورملک کی ترقی کیلئے جدوجہدکی،اس قوم کودنیاکی بہترین قوم بنانے کیلئے عمران خان اپنی زندگی وقف کردی ہے۔انہوں نے کہاکہ عمران خان کاوژن ہے کہ جب تک وطن عزیزکا بچہ بچہ زیورتعلیم سے آراستہ نہیں ہوگاملک میں تبدیلی ممکن نہیں۔