240

شوال کا چاند نظر نہیں آیا، پاکستان میں عید ہفتے کو ہوگی

کراچی: ملک میں شوال کا چاند دیکھنے کے لیے مرکزی رویت ہلال کمیٹی کا اجلاس شروع ہوا جس کے بعد چیئرمین رویت ہلال کمیٹی مفتی منیب الرحمان نے چاند نظر نہ آنے کا اعلان کیا۔

مرکزی رویت ہلال کمیٹی کا اجلاس چیئرمین رویت ہلال کمیٹی مفتی منیب الرحمان کی زیر صدارت کراچی میٹ کمپلکس میں ہوا۔اجلاس میں مرکزی اور زونل رویت ہلال کمیٹی کے اراکین سمیت محکمہ موسمیات کے نمائندے بھی شریک تھے۔

اجلاس میں 1439 ہجری کے شوال کے چاند کی رویت کا جائزہ لیا گیا اور شوال کے چاند سے متعلق ملک بھر سے شہادتیں جمع کی گئیں۔ اس سے قبل چیئرمین رویت ہلال کمیٹی مفتی منیب الرحمان نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا تھا کہ رویت ہلال کمیٹی کا اجلاس بند کمرے میں ہوگا۔

مفتی منیب نے کہا کہ شوال کے چاند سے متعلق شہادتیں بند کمرے میں لی جائیں گی، چاند سے متعلق اندازوں اور مفروضوں پر کان نہ دھرے جائیں۔انہوں نے اپیل کی کہ چاند سے متعلق کوئی پیش گوئی کرے اور نہ اندازوں پر مبنی خبردے۔

ڈائریکٹر محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ شوال کے چاند کی پیدائش 13 جون کو رات 12 بجے ہوگئی ہے، آج شام تک چاند کی عمر 19 گھنٹے 3منٹ ہوگی۔

انہوں نے بتایا کہ غروب آفتاب کے بعد 39منٹ تک چاند نظر آنے کا وقت ہے،آج شوال کا چاند نظر آنے کے امکانات کم ہیں۔

اس حوالے سے ماہر فلکیات پروفیسر جاوید اقبال نے  گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ مغرب کے وقت چاند کی عمر اتنی کم ہوگی کہ عام آنکھ سے دکھائی دینا مشکل ہوگا البتہ سندھ اور بلوچستان کے ساحلی علاقوں میں چاند دور بین سے دکھائی دیا جاسکتا ہے۔